خیبرپختونخوااسمبلی نے پبلک سروس کمیشن ،صحت اورآثارقدیمہ سے متعلق تین بلوں کی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل مارچ

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 29/03/2016 - 19:43:00 وقت اشاعت: 29/03/2016 - 19:41:00 وقت اشاعت: 29/03/2016 - 19:40:59 وقت اشاعت: 29/03/2016 - 19:29:15 وقت اشاعت: 29/03/2016 - 19:28:27 وقت اشاعت: 29/03/2016 - 19:28:27 وقت اشاعت: 29/03/2016 - 19:28:27 وقت اشاعت: 29/03/2016 - 19:27:07 وقت اشاعت: 29/03/2016 - 19:27:06 وقت اشاعت: 29/03/2016 - 19:25:56 وقت اشاعت: 29/03/2016 - 19:25:55
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

خیبرپختونخوااسمبلی نے پبلک سروس کمیشن ،صحت اورآثارقدیمہ سے متعلق تین بلوں کی متفقہ منظوری دیدی

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔29 مارچ۔2016ء )خیبرپختونخوااسمبلی اجلاس کے دوران پبلک سروس کمیشن ،صحت اورآثارقدیمہ سے متعلق تین بلوں کی متفقہ طور پر منظوری دی ہے بل کے تحت آثارقدیمہ کی سائیٹ یا نوادرات کو نقصان پہنچانے پرکسی شخص کودوسال قید اور دس لاکھ روپے جرمانے کی سزا سنائی جاسکتی ہے۔ آثارقدیمہ بل کے تحت عام لوگوں پر آثارقدیمہ کے مقامات کی کھدائی پرپابندی ہوگی حکومت کی نگرانی میں مختلف سائیٹ کامعائنہ کیاجائے گا اسی طرح اگرکسی آثارقدیمہ کی سائیٹ یا عجائب گھرمیں موجود دیگرنوادرات کو نقصان پہنچانے یا چوری کرنے کی کوشش کی تو اسے دوسال تک قید اوردس لاکھ روپے جرمانے کی سزاسنائی جاسکتی ہے۔

اگر کوئی بیرونی کمپنی کسی سائیٹ پر کھدائی کرناچاہتی ہے تو اس سے پہلے محکمہ سے این اوسی حاصل کرنی ہوگی بغیراجازت کے کھدائی کرنیوالوں کو پانچ سال قید اور دس لاکھ روپے جرمانے کی سزاسنائی جاسکتی ہے۔حکومت آثارقدیمہ کے مختلف سائیٹ کو دریافت کرنے کیلئے تکنیکی ماہرین کی خدمات حاصل کریگی اور اس کے لئے مقامی لوگوں کے خدمات بھی حاصل کئے جائینگے۔

سینئرصوبائی وزیر شہرام ترکئی نے اجلاس کے دوران ایوان کوبتایاکہ صوبے کے بڑے ہسپتالوں

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

29/03/2016 - 19:28:27 :وقت اشاعت