باچا خان یونیورسٹی کی سیکویرٹی کی ذمہ داری ادارے کی انتظامیہ پر ڈالنا قطعاً نامناسب ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل مارچ

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 01/03/2016 - 21:38:48 وقت اشاعت: 01/03/2016 - 21:38:48 وقت اشاعت: 01/03/2016 - 21:36:06 وقت اشاعت: 01/03/2016 - 21:36:06 وقت اشاعت: 01/03/2016 - 21:36:05 وقت اشاعت: 01/03/2016 - 21:34:02 وقت اشاعت: 01/03/2016 - 21:34:02 وقت اشاعت: 01/03/2016 - 21:33:05 وقت اشاعت: 01/03/2016 - 21:33:05 وقت اشاعت: 01/03/2016 - 21:33:05 وقت اشاعت: 01/03/2016 - 21:29:52
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

باچا خان یونیورسٹی کی سیکویرٹی کی ذمہ داری ادارے کی انتظامیہ پر ڈالنا قطعاً نامناسب ہے، میاں افتخار حسین

قائمقام گورنر نے مینڈیٹ سے بالا تر ہو کر متنازعہ کمیٹی کی سفارشات پر عمل درآمد کی منظوری دی ہے، رہنماء اے این پی

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔یکم مارچ۔2016ء)عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی سیکرٹری جنرل میاں افتخار حسین نے کہا ہے کہ تعلیمی اداروں کو سیکیورٹی فراہم کرنا متعلقہ حکومتی اداروں کی ذمہ داری ہے تاہم یہ بات قابل افسوس ہے کہ موجودہ حکومت اپنی کوتاہیوں کے ادراک کی بجائے باچا خان یونیورسٹی کی سیکورٹی کی ذمہ داری اب بھی ادارے کی انتظامیہ پر ڈالنے کی روش پر گامزن ہے جس کا کوئی جواز نہیں بنتا۔

اے این پی سیکرٹریٹ سے جاریکردہ بیان میں اُنہوں نے ان میڈیا رپورٹس پر تشویش کا اظہار کیا جن میں کہا گیا کہ قائمقام گورنر نے یونیورسٹی حملے سے متعلق قائم تحقیقاتی کمیٹی کی سفارشات پر عمل درآمد کی منظوری دی ہے۔میاں افتخار حسین نے کہا کہ حکومت اپنی ذمہ داریوں سے راہ فرار اختیار کر رہی ہے حالانکہ دہشتگردی کے ماحول میں یونیورسٹی سمیت تمام ایسے اداروں کو سیکیورٹی فراہم کرنا متعلقہ حکومتی اداروں کی ذمہ داری ہے۔

اُنہوں نے کہا ہے کہ جس کمیٹی کی سفارشات پر عمل درآمد کی منظوری

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

01/03/2016 - 21:34:02 :وقت اشاعت