خیبر پختونخوا پولیس میں افغان باشندے ہونے کے حوالے سے تحقیقات مکمل
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل فروری

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 23/02/2016 - 16:37:36 وقت اشاعت: 23/02/2016 - 16:36:55 وقت اشاعت: 23/02/2016 - 16:36:54 وقت اشاعت: 23/02/2016 - 16:36:53 وقت اشاعت: 23/02/2016 - 16:36:02 وقت اشاعت: 23/02/2016 - 16:36:01 وقت اشاعت: 23/02/2016 - 16:35:16 وقت اشاعت: 23/02/2016 - 16:35:15 وقت اشاعت: 23/02/2016 - 16:35:14 وقت اشاعت: 23/02/2016 - 16:33:44 وقت اشاعت: 23/02/2016 - 16:33:43
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

خیبر پختونخوا پولیس میں افغان باشندے ہونے کے حوالے سے تحقیقات مکمل

پشاور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔23 فروری۔2016ء) خیبر پختونخوا پولیس میں مزید دو افسران کے افغان باشندے ہونے کے حوالے سے تحقیقات مکمل کر لی ہے اور نہیں ملازمت سے برطرف کرنے کی سفارشات کی ہے ۔ ان میں ایک انسپکٹر اور ایک ڈی ایس پی رینک کا آفیسر شامل ہے ۔ذرائع کے مطابق صوبائی محکموں میں جعل سازی کے ذریعے قومی شناختی کارڈ میں بھرتی ہونے والے افغان باشندوں کے خلاف کاروائی شروع کردی گئی ہے ۔

ذرائع نے بتایا ہے کہ اس حوالے سے خصوصی کمیٹی تمام ملازمین کی چھان بین کر رہی ہے پہلے مرحلے میں نوشہرہ میں تعینات پولیس کانسٹیبل کی نشاندہی کے بعد انہیں ملازمت سے برطرف کیا گیا ہے ۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ مزید دو پولیس افسران کی نشاندہی کر دی گئی ہے جن کے خلاف بھی کاروائی کی جا رہی ہے ۔

23/02/2016 - 16:36:01 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان