سینیٹر تاج حیدر کا باچا خان مرکز پشاور کا دورہ ،میاں افتخار حسین سے ملاقات
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ فروری

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 17/02/2016 - 20:28:37 وقت اشاعت: 17/02/2016 - 20:26:09 وقت اشاعت: 17/02/2016 - 20:26:09 وقت اشاعت: 17/02/2016 - 20:09:44 وقت اشاعت: 17/02/2016 - 20:06:57 وقت اشاعت: 17/02/2016 - 20:06:57 وقت اشاعت: 17/02/2016 - 20:06:57 وقت اشاعت: 17/02/2016 - 20:04:10 وقت اشاعت: 17/02/2016 - 20:04:10 وقت اشاعت: 17/02/2016 - 20:02:45 وقت اشاعت: 17/02/2016 - 20:02:45
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

سینیٹر تاج حیدر کا باچا خان مرکز پشاور کا دورہ ،میاں افتخار حسین سے ملاقات

دہشتگردی اور شدت پسندی سے نمٹنے کیلئے جمہوریت پسند قوتوں کی ذمہ داریاں بڑھ گئی ہیں، سینیٹر تاج حیدر , نئی مردم شمار نہ ہونے سے چھوٹے صوبے احساس محرومی کا شکار ہیں، امن و امان کا بہانہ رکاوٹ نہیں بننا چاہئے، میاں افتخار حسین

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔17 فروری۔2016ء)ملک سے دہشت گردی اور انتہاپسندی کے خاتمے کے لیے تمام ترقی پسند اور قوم پرست قوتوں کو مشترکہ جدوجہد کرنی ہوگی،اور حکومت کوامن ومان کے مسئلے کو اولین ترجیح دینی ہوگی،ان خیالات کا اظہار پاکستان پیپلزپارٹی کے مرکزی رہنما اور سینٹر تاج حیدر نے باچاخان مرکز کے دورے کے موقع پر اے این پی کے مرکزی سیکرٹری جنرل میاں افتخار حسین سے ملاقات کے دوران کیا،دونوں رہنماوں نے اس بات پر اتفاق کیا کہ موجودہ صورتحال میں ملک کا سب سے بڑا مسئلہ دہشت گردی،انتہاپسندی اور شدت پسندی ہے،جس کا راستہ روکنے کے لیے تمام مکاتب فکر بالخصوص ترقی پسند اور قوم پرست قوتوں کی ذمہ داری اور بھی بڑھ گئی ہے،انہوں نے کہا کہ مردم شماری کے لیے سازگار ماحول بنانا حکومت کا فرض ہے ،بار بارمردم شماری ملتوی کرنا مسئلے کا حل نہیں بلکہ اس سے چھوٹے صوبوں میں طرح طرح کے خدشات پیدا ہورہے ہیں،کیوں کہ ملک میں تمام فیصلے آبادی کی بنیاد پر کیے جاتے ہیں،مگر نئی مردم شماری نہ کیے جانے کے باعث چھوٹے صوبے احساس محروی کا شکارہورہے ہیں، اگرچہ صوبوں کی آبادی میں ہرسال بے تحاشا اضافہ ہورہا ہے اور ضرورت

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

17/02/2016 - 20:06:57 :وقت اشاعت