خیبر پختونخوا حکومت نے مارچ میں ہونے والی مردم شماری پر تحفظات کاا ظہار کردیا
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ فروری

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 10/02/2016 - 21:01:43 وقت اشاعت: 10/02/2016 - 21:01:43 وقت اشاعت: 10/02/2016 - 21:01:43 وقت اشاعت: 10/02/2016 - 21:00:55 وقت اشاعت: 10/02/2016 - 21:00:55 وقت اشاعت: 10/02/2016 - 21:00:55 وقت اشاعت: 10/02/2016 - 20:25:56 وقت اشاعت: 10/02/2016 - 20:25:56 وقت اشاعت: 10/02/2016 - 20:25:56 وقت اشاعت: 10/02/2016 - 20:24:57 وقت اشاعت: 10/02/2016 - 20:24:57
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

خیبر پختونخوا حکومت نے مارچ میں ہونے والی مردم شماری پر تحفظات کاا ظہار کردیا

پشاور(اُردو پوائنٹ تازہ ترین 10 فروری۔2015ء)خیبر پختونخوا حکومت نے مارچ میں ہونے والی مردم شماری پر تحفظات کاا ظہار کردیا ہے جس کے باعث مارچ میں ہونے والی مردم شماری کے امکانات ختم ہونا شروع ہو گئے ہیں۔رواں سال کے مارچ میں ہونے والی مردم شماری کے لئے خیبر پختونخوا سمیت ملک بھر میں ایک لاکھ ستر ہزار سینس بلاک بن چکے ہیں ہر بلاک میں شمار کنندہ کے ساتھ ایک فوجی جوان بھی ہو گا۔

ذرائع نے بتایا ہے کہ صوبائی حکومت کی جانب سے مردم شماری سے تعلق گورننگ کونسل

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

10/02/2016 - 21:00:55 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان