محنت کش طبقوں کی مشاورت سے لیبر پالیسی بنانے پر تیزی سے کام جاری ہے ،وزیر محنت ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ فروری

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 10/02/2016 - 16:49:55 وقت اشاعت: 10/02/2016 - 16:49:55 وقت اشاعت: 10/02/2016 - 16:49:12 وقت اشاعت: 10/02/2016 - 16:49:12 وقت اشاعت: 10/02/2016 - 16:49:12 وقت اشاعت: 10/02/2016 - 16:48:30 وقت اشاعت: 10/02/2016 - 16:48:30 وقت اشاعت: 10/02/2016 - 16:48:30 وقت اشاعت: 10/02/2016 - 16:47:20 وقت اشاعت: 10/02/2016 - 16:47:20 وقت اشاعت: 10/02/2016 - 16:47:20
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

محنت کش طبقوں کی مشاورت سے لیبر پالیسی بنانے پر تیزی سے کام جاری ہے ،وزیر محنت خیبرپختونخوا

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔10 فروری۔2016ء)خیبرپختونخوا کی وزیر برائے محنت ومعدنی ترقی آنیسہ زیب طاہر خیلی نے یورپی یونین کی جانب سے پاکستان کو جی ایس پی پلس کا درجہ دینے کے فیصلے کاخیرمقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ اب ضرورت اس امر کی ہے کہ تمام سٹیک ہولڈرز ملکر یورپی یونین کے اس اقدام سے بھرپور فائدہ اٹھا کرملکی معیشت کو مضبوط بنانے میں اپنا کلیدی کردار ادا کرے کیونکہ آج پوری دنیا ایک گلوبل ویلج بن چکی ہے اورعالمی سطح پر ہرملک کا کسی نہ کسی طرح دیگر ممالک پر انحصارہوتاہے اس لئے ہمیں بھی عالمی منڈیوں میں اپنے برآمدات کے لئے نمایاں مقام پیدا کرنا چاہیئے ۔

ان خیالات کااظہار انہوں نے بدھ کے روزپشاورمیں جی ایس پی پلس سکیم اورپاکستان میں معیارات محنت پرعمل درآمد کے چلینجز کے حوالے سے پاکستان ورکرز کنفیڈریشن رپورٹ کے بار ے میں منعقدہ افتتاحی تقریب سے بطورمہمان خصوصی خطاب کے دوران کیا۔تقریب سے سیکرٹری محنت عالمگیرشاہ، پاکستان ورکرز کنفیڈریشن کے مرکزی صدر ایم ظہوراعوان ،سنٹرل آرگنائزرچوہدری محمد یعقوب اوردیگرنے بھی خطاب کرتے ہوئے پاکستان کو جی ایس پی پلس کادرجہ دینے کے فیصلے کو ملکی معیشت کے لئے خوش آئند قراردیا اور کہا کہ صنعتی ترقی میں محنت کشوں کاایک نہایت اہم کردار ہوتاہے اس لئے صنعتکاری کے شعبے میں افرادی قوت کے مسائل کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے بہتر اور موثرپالیسی وضع کی جائے جبکہ غیر رجسٹرڈ کارخانوں کی رجسٹریشن کی جائے ۔

مقررین نے کہا کہ یورپی یونین کی جانب سے 27 بین الاقوامی کنونشنزپربھرپورعمل درآمد کیاجائے تاکہ جی ایس پی پلس سے ہونے والے فوائد آئندہ

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

10/02/2016 - 16:48:30 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان