خطہ کو خراب صورتحال سے نکلنے کیلئے تمام پختونوں کو متحد ہونا پڑے گا،آفتاب شیرپاؤ
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ فروری

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 05/02/2016 - 18:20:51 وقت اشاعت: 05/02/2016 - 18:20:51 وقت اشاعت: 05/02/2016 - 18:19:15 وقت اشاعت: 05/02/2016 - 18:19:15 وقت اشاعت: 05/02/2016 - 18:19:15 وقت اشاعت: 05/02/2016 - 18:17:46 وقت اشاعت: 05/02/2016 - 18:17:46 وقت اشاعت: 05/02/2016 - 18:17:46 وقت اشاعت: 05/02/2016 - 18:16:47 وقت اشاعت: 05/02/2016 - 18:16:47 وقت اشاعت: 05/02/2016 - 18:16:47
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

پشاور شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

وقت اشاعت: 18/01/2017 - 13:18:22 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 17:25:13 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 17:51:32 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 17:51:44 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 17:59:23 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 17:59:23 پشاور کی مزید خبریں

خطہ کو خراب صورتحال سے نکلنے کیلئے تمام پختونوں کو متحد ہونا پڑے گا،آفتاب شیرپاؤ

پختون قوم ایک ایسے دوراہے پر کھڑی ہے کہ اس کی بقاء کا مسئلہ پیدا ہو گیا ہے، جاری حالات میں پختون قوم کو ایک طرف دہشت گردی کی صورت میں ایک بڑے مسئلے کا سامنا ہے تو دوسری طرف وفاقی حکومت کی عدم توجہی کی بدولت مایوسی کا شکار ہے،چیئرمین قومی وطن پارٹی

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔05 فروری۔2016ء)قومی وطن پارٹی کے مرکزی چیئرمین آفتاب احمد خان شیرپاؤنے کہا ہے کہ پختون خطہ اس وقت تاریخ کے مشکل ترین دور سے گزر رہا ہے اور ان حالات سے نکلنے کیلئے تمام پختونوں کو متحد ہونا پڑے گا کیونکہ پختونوں کے اتحاد و اتفاق کے بغیر ان حالات سے چھٹکارہ پانا ناممکن ہے۔ان خیالات کا اظہار انھوں نے تخت بھائی مردان میں عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔

اس موقع پرضلع مردان کے سیاسی رہنماؤں حبیب اﷲ خان مہمند،سعداﷲ خان،ڈاکٹر صاحبزادہ اورمختیار حسین نے اپنے سینکڑوں ساتھیوں اور خاندانوں سمیت قومی وطن پارٹی میں شمولیت کا اعلان کیا۔ آفتاب شیرپاؤ نے پختونوں کی سرزمین پر امن لانے کیلئے ان کے اتحاد و اتفاق پر زور دیتے ہوئے کہا کہ پختون قوم ایک ایسے دوراہے پر کھڑی ہے کہ اس کی بقاء کا مسئلہ پیدا ہو گیا ہے ان حالات میں تمام پختونوں کو یک آوازاور متحد ہوکر خطے پرامن کے قیام،پختون قوم کے حقوق و تحفظ کو یقینی بنانے کیلئے اپنا کردار ادا کرنا ہو گا دوسری طرف موجودہ حالات میں ایسے پختون لیڈر شپ چاہیے جو قوم سے دو قدم آگے بڑھ کر ان کی رہنمائی کرے۔

انھوں نے کہا کہ جاری حالات میں پختون قوم کو ایک طرف دہشت گردی کی صورت میں ایک بڑے مسئلے کا سامنا ہے تو دوسری طرف وفاقی حکومت کی عدم توجہی کی بدولت مایوسی کا شکار ہے۔انھوں نے کہا کہ ہمارا ملک ایک وفاقی ریاست ہونے کے ناطے یہاں پر بسنے والی تمام اقوام آئینی طور پر برابر کے حقوق کے حقدار ہیں لیکن مرکز میں بھیٹے حکمرانوں نے چھوٹی قومیتوں کو عموماً اور پختون قوم کو خصوصاً نظر انداز کیا ہے جس سے ان

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

05/02/2016 - 18:17:46 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان