فاٹا میں تعمیر و ترقی کا ایک مربوط اور جامع عمل کا آغاز کردیاہے ،سردارمہتاب
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ فروری

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 03/02/2016 - 19:32:18 وقت اشاعت: 03/02/2016 - 19:21:07 وقت اشاعت: 03/02/2016 - 19:21:07 وقت اشاعت: 03/02/2016 - 19:19:58 وقت اشاعت: 03/02/2016 - 19:18:46 وقت اشاعت: 03/02/2016 - 19:17:43 وقت اشاعت: 03/02/2016 - 19:15:08 وقت اشاعت: 03/02/2016 - 19:14:25 وقت اشاعت: 03/02/2016 - 19:13:43 وقت اشاعت: 03/02/2016 - 19:09:28 وقت اشاعت: 03/02/2016 - 19:09:28
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

فاٹا میں تعمیر و ترقی کا ایک مربوط اور جامع عمل کا آغاز کردیاہے ،سردارمہتاب

قبائلی علاقہ میں امن و امان کا قیام ،بدامنی کا خاتمہ ترجیحات میں سرفہرست ہیں، پاک فوج، سیکورٹی فورسز، سول انتظامیہ ،محب وطن قبائل کی قربانیوں سے فاٹا کا امن و سکون لوٹ آیا ہے جس کے بعد نقل مکانی کرنیوالے قبائلی بہن بھائیوں کو ترجیحی بنیادوں پر ان کے گھروں کو باعزت طور پر بھجوانے کیلئے تمام تر وسائل بروئے کار لائے جارہے ہیں ،گورنرخیبرپختونخوا

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔03 فروری۔2016ء) خیبر پختونخوا کے گورنر سردار مہتاب احمد خان نے کہاہے کہ فاٹا میں تعمیر و ترقی کا ایک مربوط اور جامع عمل کا آغاز کردیاگیاہے جس کے تحت اربوں روپے کی لاگت سے شروع کئے جانے والے منصوبوں کی تکمیل پر قبائلی علاقوں میں ترقی و خوشحالی کا انقلاب برپاہوگا۔انہوں نے ان خیالات کا اظہار گورنر ہاؤس پشاور میں صوبہ کی سرکردہ شخصیات سے غیررسمی بات چیت کے دوران کیا اس موقع پر صوبہ کے سابق گورنرلیفٹیننٹ جنرل(ر)سید افتخار حسین شاہ، کمانڈر خلیل الرحمان، بیرسٹر مسعودکوثر اور انجنیئرشوکت اﷲ، سابق وزیر اعلی پیر صابر شاہ، سینیٹر اقبال ظفر جھگڑا، وزیراعظم کے مشیر امیر مقام اور دیگر زعماء بھی موجود تھے گورنر سردار مہتاب احمد خان نے کہاکہ قبائلی علاقہ میں امن و امان کا قیام اوروہاں سے بدامنی کا خاتمہ ان کی ترجیحات میں سرفہرست ہیں اور پاک فوج، سیکورٹی فورسز، سول انتظامیہ اور محب وطن قبائل کی قربانیوں سے فاٹا کا امن و سکون لوٹ آیا ہے جس کے بعد نقل مکانی کرنے والے قبائلی بہن بھائیوں کو ترجیحی بنیادوں پر ان کے گھروں کو باعزت طور پر بھجوانے کے لئے تمام تر وسائل بروئے کار لائے جارہے ہیں جس کا اندازہ اس امر سے لگایا جاسکتا ہے کہ مجموعی طور پر 18لاکھ ٹی ڈی پیز میں سے اب تک 9لاکھ قبائلیوں کو ان کے گھروں کو واپس بھجوایا جاچکاہے اور واپس جانے والے قبائل کوموبائل کمپنیوں کے ذریعہ نقد رقوم کے امدادی پیکج دئیے جارہے ہیں جن کی شفافیت کا یہ عالم ہے کہ امدادی رقوم کی ادائیگی میں اب تک کوئی شکایت موصول نہیں ہوئی انہوں نے کہا کہ فاٹا کی تعمیر و ترقی اور یہاں کی پسماندگی کے خاتمہ کے لئے ایک جامع پروگرام کے تحت کام ہورہاہے قبائلی نوجوانوں کو باعزت روزگار کی فراہمی کے لئے اب تک 20ہزارسے زائد نوجوانوں کو مختلف شعبوں میں تربیت دی جاچکی ہے اس کے ساتھ بین الاقوامی ادارہ اخوت کے ذریعہ فاٹا کے لوگوں کو روزگار اور کاروبار کے لئے بلاسود قرضہ جات کی سکیم کا کامیاب آغاز کیا گیاہے فاٹا کے عوام کو بہترین شہری سہولیات کی فراہمی کی غرض سے پہلی مرتبہ قبائلی علاقہ

مکمل خبر پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

03/02/2016 - 19:17:43 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان