قومیں عمارتوں ، میٹرو اور موٹرویز کی تعمیر کی بجائے علم و تحقیق پر سرمایہ کاری ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
ہفتہ جنوری

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 30/01/2016 - 21:40:19 وقت اشاعت: 30/01/2016 - 21:38:08 وقت اشاعت: 30/01/2016 - 21:38:08 وقت اشاعت: 30/01/2016 - 21:38:08 وقت اشاعت: 30/01/2016 - 21:31:21 وقت اشاعت: 30/01/2016 - 21:31:21 وقت اشاعت: 30/01/2016 - 21:29:50 وقت اشاعت: 30/01/2016 - 21:29:50 وقت اشاعت: 30/01/2016 - 21:28:06 وقت اشاعت: 30/01/2016 - 21:28:06 وقت اشاعت: 30/01/2016 - 21:25:23
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

قومیں عمارتوں ، میٹرو اور موٹرویز کی تعمیر کی بجائے علم و تحقیق پر سرمایہ کاری سے ترقی کرتی ہیں ، نئے چیلنجز سے نمٹنے کیلئے صحت اور تعلیم کے شعبوں پر سرمایہ کاری کرنا ہوگی ،مرکز میں بر سر اقتدار آنے پر کرپٹ سیاستدانوں کا سخت احتساب کرینگے

تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کا ایڈوانسز ان کینسر اینڈ ہماٹالوجی کی دو روزہ قومی کانفرنس سے خطاب

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔30 جنوری۔2016ء ) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ قومیں عمارتوں ، میٹرو اور موٹرویز کی تعمیر کی بجائے افراد اور علم و تحقیق پر سرمایہ کاری سے ترقی کرتی ہیں ۔ اگر ہم نے 21ویں صدی کے چیلنجزکا مقابلہ کرنا ہے تو اس کے لیے ایک واضح وژن کے ساتھ صحت اور تعلیم کے شعبوں پر سرمایہ کاری کرنی ہوگی ۔

مرکز میں پی ٹی آئی کی حکومت بننے کے بعد ہم کرپٹ سیاستدانوں کا لوٹاہوا سرمایہ وطن واپس لا کر اسے تعلیم اور صحت کے شعبوں پر خرچ کریں گے ۔ وہ ہفتہ کو خیبر میڈیکل یونیورسٹی پشاور میں ایڈوانسز ان کینسر اینڈ ہماٹالوجی کی دو روزہ قومی کانفرنس کی افتتاحی تقریب سے بطور مہمان خصوصی خطاب کر رہے تھے ۔ اس موقع پر وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک کے علاوہ پی ٹی آئی کے مرکزی سیکرٹری جنرل جہانگیر ترین ، کے ایم یو کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر حفیظ اﷲ ، آئی بی ایم ایس کے ڈائریکٹر پروفیسر ڈاکٹر جواد احمد ، پشاور اور انجینئرنگ یونیورسٹی کے وائس چانسلرز، فیکلٹی ، کانفرنس کے شرکاء اور طلبہ و طالبات کی ایک بڑی تعدادبھی موجود تھی ۔

عمران خان نے کہا کہ انہیں یہ جان کر بے حد خوشی ہوئی ہے کہ خیبر میڈیکل یونیورسٹی پشاور نے مختصر عرصے میں صحت کے مختلف شعبوں میں ماہرین کی ایک تربیت یافتہ ٹیم تیار کی ہے ۔ انھوں نے کہا کہ عمارتیں ، اورنج ٹرین اور میٹرو بنانا کوئی بڑا کارنامہ نہیں ہے اصل کام انسانوں پر سرمایہ کاری ہے ۔ جرمنی اور جاپان کا انفراسٹرکچر دوسری جنگ عظیم میں مکمل طور پر تباہ ہو گیا تھالیکن جب انھوں نے افراد پر سرمایہ کاری کی تو ہ دس پندرہ سالوں کے اندر اندر نہ صرف پہلے سے بہتر انفراسٹرکچر بنانے میں کامیاب ہو گئے بلکہ ان کا شمار معاشی طور پر ترقی یافتہ ممالک میں بھی ہونے لگا ۔

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

30/01/2016 - 21:31:21 :وقت اشاعت