پاک فوج کا دہشتگردی کیخلاف جنگ زیادہ طاقت کے ساتھ جاری رکھنے کے عزم کااظہار
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ جنوری

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 20/01/2016 - 22:37:13 وقت اشاعت: 20/01/2016 - 22:33:05 وقت اشاعت: 20/01/2016 - 22:33:05 وقت اشاعت: 20/01/2016 - 22:29:22 وقت اشاعت: 20/01/2016 - 22:29:22 وقت اشاعت: 20/01/2016 - 22:29:22 وقت اشاعت: 20/01/2016 - 22:23:48 وقت اشاعت: 20/01/2016 - 22:14:57 وقت اشاعت: 20/01/2016 - 22:13:47 وقت اشاعت: 20/01/2016 - 22:13:47 وقت اشاعت: 20/01/2016 - 22:13:47
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

پاک فوج کا دہشتگردی کیخلاف جنگ زیادہ طاقت کے ساتھ جاری رکھنے کے عزم کااظہار

مایوس اورگندی سوچ رکھنے والے دہشتگردآسان اہداف پرحملے کرکے معصوم لوگوں کو نشانہ بنارہے ہیں،دن رات جاگ کرجتنی کامیابیاں حاصل کی ہیں انہیں ضائع نہیں ہونے دینگے،ڈی جی آئی ایس پی آر لیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ کی میڈیابریفنگ

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔20 جنوری۔2016ء)پاک فوج کے ترجمان نے دہشتگردی کیخلاف جنگ زیادہ طاقت کے ساتھ جاری رکھنے کے عزم کااظہارکرتے ہوئے کہاہے کہ چارسدہ حملے کے حوالے سے معلومات کی بنیاد پربریک تھروہوچکاہے،حملہ آورکہا ں سے آئے،کس نے بھیجے ،معلومات مل چکی ہیں، چاروں دہشتگردوں کومار دیاگیاہے ان کے قبضے سے ملنے والے اسلحہ اورموبائل فونزکی بنیادپرانٹیلی جنس پکچرتیارکی گئی ہے،فورنزک جائزے کی بنیاد پرمزیدکام ہورہاہے،دہشتگردقوم کے عزم کومتزلزل نہیں کرسکتے،دشمن کو اپنے مقصد میں کامیاب نہیں ہونے دینگے،پوری قوم کی طرف سے دہشتگردی کیخلاف ردعمل آئیگا تودہشتگردکامیاب نہیں ہوسکیں گے،قوم نے دہشتگردوں اوران کی سوچ کورد کردیا،مایوس اورگندی سوچ رکھنے والے دہشتگردآسان اہداف پرحملے کرکے معصوم لوگوں کو نشانہ بنارہے ہیں،دن رات جاگ کرجتنی کامیابیاں حاصل کی ہیں انہیں ضائع نہیں ہونے دینگے۔

بدھ کی شب ڈی جی آئی ایس پی آرلیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ نے کورہیڈکوارٹرمیں بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ چارسدہ میں باچاخان یونیورسٹی پر چاردہشتگردوں نے حملہ کیا اورسیکیورٹی فورسز کی کارروائی میں چاروں مارے گئے۔ انہوں نے بتایا کہ دہشتگردی کے واقعہ میں18طلباء اورسٹاف کے دو افرادشہید ہوئے، حملے کی تفصیلات بیان کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ فوج نے فوری طورپرپہنچ کردہشتگردوں کویونیورسٹی کی بالائی منزل پرمحدود کرتے ہوئے انہیں نشانہ بنایا اور چاروں دہشتگردوں کو ہلاک کردیا۔

انہوں نے کہاکہ فوج پہنچی تو چاروں دہشتگرد زندہ تھے مارے گئے دہشتگردوں سے اسلحہ بھی برآمد کیاگیا ان کے پاس گرنیڈ بھی تھے ۔ڈی جی آئی ایس پی آر نے بتایا کہ آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے یونیورسٹی اورہسپتال کادورہ بھی کیابعد میں پشاورمیں دہشتگردوں کے حملے اورآپریشن کاجائزہ لیاگیا جس میں آرمی چیف کی سربراہی میں ہونیوالے اجلاس میں کورکمانڈرآپریشن کمانڈر اورانٹیلی جنس حکام شریک ہوئے۔

اجلاس کے دوران پشاورسے چارسدہ تک کافاصلہ طے کرنے کیلئے فوج نے جتناوقت لگایا اس پراطمینان کااظہار کیاگیا ۔ انہوں نے بتایا کہ دہشتگردوں کیخلاف بروقت کارروائی نہ ہونے کی صورت میں نقصان کافی زیادہ ہوسکتاتھا۔لیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ نے صحافیوں کو آگاہ کیا کہ دہشتگردوں کے پاس سے دوموبائل فونز بھی برآمد ہوئے کارروائی کے دوران ان فونز پرکالیں ہوتی رہیں جبکہ ایک دہشتگرد کے مرنے کے بعد بھی اس کے موبائل فون پرکال آتی رہی اس کے پاس افغان سم تھی تاہم فی الحال زیادہ تفصیلات میں نہیں جاناچاہتے اورسم کی کمپنی کے بارے میں نہیں بتایاجاسکتا۔

انہوں نے کہاکہ موبائل فون کی کالز سمیت دیگرحاصل ہونیوالی معلومات کی بنیاد پرایک انٹیلی جنس پکچربنائی گئی ہے اورفورنزک جائزہ لیاگیاہے جبکہ فنگرپرنٹس اوردیگرمتعلقہ معلومات نادرا سے بھی شیئرکی گئی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ پشاور کے گردونواح میں انٹیلی جنس کی بنیاد پر آپریشنز جاری ہیں اس بات کا پتہ چل گیا ہے کہ یہ حملہ آورکون تھے ،کہاں سے آئے، کس نے تیار کئے ،کس کی مدد حاصل تھی اور کس نے انہیں بھیجا اس سلسلہ میں کافی معلومات جمع ہوچکی ہیں اور مزید کام ہورہا ہے جیسے بریک تھرو ہوگا عوام سے شیئرکرینگے فی الوقت یہ بتاناچاہتا ہوں کہ حملے کے حوالے سے ملنے والی معلومات کی بنیاد پربریک تھرو ہوچکا ہے ۔

انہوں نے کہاکہ ہم اس وقت حالت جنگ میں ہیں آپریشن ضرب عضب کی کامیابیاں سب کے سامنے ہیں اکثردہشتگردوں کو ختم کیاجاچکاہے اورانٹیلی جنس کی

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

20/01/2016 - 22:29:22 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان