انفارمیشن ٹیکنالوجی کا فروغ حکومت کی اولین ترجیحات میں شامل ہے ، صوبائی حکومت ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات جنوری

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 14/01/2016 - 23:07:44 وقت اشاعت: 14/01/2016 - 23:07:44 وقت اشاعت: 14/01/2016 - 23:06:40 وقت اشاعت: 14/01/2016 - 23:06:40 وقت اشاعت: 14/01/2016 - 23:06:40 وقت اشاعت: 14/01/2016 - 23:04:58 وقت اشاعت: 14/01/2016 - 22:56:35 وقت اشاعت: 14/01/2016 - 22:56:35 وقت اشاعت: 14/01/2016 - 22:53:34 وقت اشاعت: 14/01/2016 - 22:53:34 وقت اشاعت: 14/01/2016 - 22:53:34
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

انفارمیشن ٹیکنالوجی کا فروغ حکومت کی اولین ترجیحات میں شامل ہے ، صوبائی حکومت نے اس مقصد کیلئے 2016کوٹیکنالوجی کا سال قرار دیا ہے جس کے تحت نوجوانوں کو انفارمیشن ٹیکنالوجی کے شعبے میں جدید عملی تربیت دینے ،انہیں سکالر شپ اور انٹر شپ فراہم کرنے کے متعدد منصوبے شامل ہیں سینئر صوبائی وزیر شہرام خان تراکئی

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔14 جنوری۔2016ء )خیبر پختونخوا کے سینئر وزیر برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی شہرام خان تراکئی نے صوبے میں انفارمیشن ٹیکنالوجی کے فروغ کو اپنی حکومت کی اولین ترجیحات میں سے ایک قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ صوبائی حکومت نے اس مقصد کیلئے 2016کوٹیکنالوجی کا سال قرار دے دیا ہے جس کے تحت نوجوانوں کو انفارمیشن ٹیکنالوجی کے شعبے میں جدید عملی تربیت دینے ،انہیں سکالر شپ اور انٹر شپ فراہم کرنے کے متعدد منصوبے شامل ہیں تاکہ ان نوجوانوں کی صلاحیتوں کو اجاگر کرنے اور ان کیلئے ملکی اور غیر ملکی مارکیٹس میں روزگار کے باعزت مواقع پیداکئے جاسکیں۔

ان خیالات کا اظہارانہوں نے جمعرات کے ر وزپشاور کے ایک مقامی ہوٹل میں منعقدہ دو روزہ آئی ٹی سٹارٹ اپس ورکشاپ کے اختتامی سیشن سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیاجس کا اہتمام خیبر پختونخوا انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ نے پاکستان سافٹ ویئر ایکسپورٹ بورڈکے اشتراک سے کیاتھا۔آئی ٹی کے شعبے سے وابستہ نجی و سرکاری تعلیمی اداروں کے طلباء و طالبات کی کثیر تعداد نے ورکشاپ میں شرکت کی جنہیں قومی سطح کی آئی ٹی کمپنیوں کے ماہرین نے آئی ٹی اسٹارٹ اپس اور انٹررپر ینور کے بارے میں عملی تربیت فراہم کی۔

اپنے خطاب میں صوبائی وزیر نے کہا کہ نوجوان موجودہ صوبائی حکومت کی توجہ کامرکزہیں جنہیں با اختیار اور با روزگار

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

14/01/2016 - 23:04:58 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان