ہمیں عوام کو خدمات کی فراہمی کے لئے آگے بڑھنے کی سوچ کیساتھ کام کرنا ہوگا ،ماضی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل جنوری

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 12/01/2016 - 22:22:17 وقت اشاعت: 12/01/2016 - 22:22:17 وقت اشاعت: 12/01/2016 - 22:20:54 وقت اشاعت: 12/01/2016 - 22:20:54 وقت اشاعت: 12/01/2016 - 22:20:54 وقت اشاعت: 12/01/2016 - 22:19:41 وقت اشاعت: 12/01/2016 - 22:14:11 وقت اشاعت: 12/01/2016 - 22:12:59 وقت اشاعت: 12/01/2016 - 22:12:59 وقت اشاعت: 12/01/2016 - 22:12:06 وقت اشاعت: 12/01/2016 - 22:12:06
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

ہمیں عوام کو خدمات کی فراہمی کے لئے آگے بڑھنے کی سوچ کیساتھ کام کرنا ہوگا ،ماضی کا رونا نہیں رویا جاسکتا، محکمہ اے جی پی میں جون 2016تک 500نئے اہلکار بھرتی کیے جائیں گے، ٹریننگ انسٹیٹیوٹ کو سنٹر آف ایکسیلنس میں تبدیل کرکے اسلام آباد منتقل کیا جائے گا ، یہ اگلے تین سالوں میں نیشنل اکیڈیمی آف پبلک فنانس اینڈ اکاؤنٹسی بن جائے گا

اکاؤنٹنٹ جنرل پاکستان رانا اسد امین کا اکاؤنٹنٹ جنرل آفس پشاور کے نوتعمیر بی بلاک کی افتتاحی تقریب سے خطاب

پشاور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔12 جنوری۔2016ء ) اکاؤنٹنٹ جنرل آف پاکستان رانا اسد امین نے کہاہے کہ ہمیں عوام کو خدمات کی احسن طریقے سے فراہمی کے لئے آگے بڑھنے کی سوچ کیساتھ کام کرنا ہوگا ،ماضی میں جو ہوا اس کا رونا نہیں رویا جاسکتا، تاریخ میں پہلی مرتبہ ہم نے سال2015تا2019سٹریٹیجک پلان کی منظوری دے دی ہے، جس میں اکاؤنٹنٹ جنرل آف پاکستان کے ملازمین کے لئے بے تحاشہ سہولیات کے علاوہ پاکستان اور بیرون ممالک میں سٹاف کی ٹریننگ ،سامان کی خریداری ،انفرا سٹرکچر کی بہتری اور سافٹ ویئر ڈیویلپمنٹ شامل ہیں جسے باقاعدہ طور پر مانیٹر کیا جائے گا،محکمے میں نئی اسامیاں پیدا کی جا رہی ہیں جون 2016تک 500نئے اہلکار بھرتی کیے جائیں گے، ٹریننگ انسٹیٹیوٹ کو سنٹر آف ایکسیلنس میں تبدیل کرکے اسلام آباد منتقل کیا جائے گا جو اگلے تین سالوں میں نیشنل اکیڈیمی آف پبلک فنانس اینڈ اکاؤنٹسی بن جائے گا ،سرکاری تقریبات میں قومی زبان کے استعمال کو ترجیح دی جائے ۔

منگل کو اکاؤنٹنٹ جنرل آفس پشاور کے نوتعمیر بی بلاک کافتتاح کرنے کے بعد منعقدہ تقریب سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کر رہے تھے ۔اس موقع پراکاؤنٹنٹ جنرل خیبر پختونخوا شہزادہ ایم تیمور خسرو، ایڈیشنل اکاؤنٹنٹ جنرل پشاورمحمد طیب خان،ایڈیشنل اکاؤنٹنٹ جنرل شاہ محمود ،ڈپٹی اکاؤنٹنٹ جنرل زبیر خان اور صوبائی ڈی جی آڈٹ جاوید اقبال کے علاوہ اکائنٹنٹ جنرل آفس کے دیگر افسران و اہلکار بھی موجودتھے۔

افتتاحی تقریب کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے آڈیٹر جنرل آف پاکستان رانا اسد امین نے سپریم کورٹ آف پاکستان اور وفاقی حکومت کے احکامات کی روشنی میں تقریب سے اردو میں خطاب کرتے ہوئے اس بات پر زور دیاکہ سرکاری تقریبات میں قومی زبان کے استعمال کو ترجیح دی جائے ۔انہوں نے اپنے خطاب میں کہا کہ جب سے انہوں نے اے جی پی کی ذمہ داریاں سنبھالی ہیں انہوں نے محکمے کی عظمت رفتہ بحال کرنے اور اس کی ساکھ کی بہتری کے لئے دوررس اقدامات اٹھائے ہیں جس میں محکمے کے افسران اور اہلکاروں کی کارکردگی عیاں ہے اور محکمہ بتدریج بہتری کی طرف گامزن ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں عوام کو خدمات کی احسن طریقے سے فراہمی کے لئے آگے بڑھنے کی سوچ کیساتھ کام کرنا ہوگا ماضی میں جو ہوا اس کا رونا نہیں رویا جاسکتا۔انہوں نے کہا کہ میں نے اور میری ٹیم نے انسانی وسائل کو و بہتر انداز میں استعمال کیاجسکے خاطر خواہ نتائج برآمد ہوئے۔انہوں نے کہا کہ ادارے کے تمام ملازمین ریڑھ کی ہڈی کی مانند ہیں اکاؤنٹنٹ جنرل سے لے کر نائب قاصد تک تمام اہلکار محکمے کی جان ہیں اور انہی کی بدولت محکمہ ترقی کرے گامحکمے میں سزا اور جزا کے عمل کو رائج کیا گیا اچھی شہرت کے حامل لوگوں کو اہم ذمہ داریاں تفویض کی گئیں جبکہ غیر تسلی بخش کارکردگی کے حامل اہلکاروں کے خلاف محکمانہ کارروائی بھی کی گئی۔

پچھلے چھ مہنیوں میں محکمے میں کافی تبدیلی

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

12/01/2016 - 22:19:41 :وقت اشاعت