اقتصادی راہداری منصوبہ میں تبدیلی خیبرپختونخوا کے عوام پر وفاقی حکومت کا ڈرون ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ جنوری

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 08/01/2016 - 21:23:21 وقت اشاعت: 08/01/2016 - 21:23:21 وقت اشاعت: 08/01/2016 - 21:22:23 وقت اشاعت: 08/01/2016 - 21:22:23 وقت اشاعت: 08/01/2016 - 21:20:36 وقت اشاعت: 08/01/2016 - 21:16:18 وقت اشاعت: 08/01/2016 - 21:16:18 وقت اشاعت: 08/01/2016 - 21:14:54 وقت اشاعت: 08/01/2016 - 21:14:54 وقت اشاعت: 08/01/2016 - 21:13:14 وقت اشاعت: 08/01/2016 - 21:13:14
پچھلی خبریں - مزید خبریں

پشاور

اقتصادی راہداری منصوبہ میں تبدیلی خیبرپختونخوا کے عوام پر وفاقی حکومت کا ڈرون حملہ ہے، گورنر کے پی کے اس کو باز رکھیں ورنہ صوبہ کی تمام سیاسی جماعتوں کو ساتھ ملاکر اسلام آبا کی جانب لانگ مارچ کریں گے

جماعت اسلامی خیبر پختونخوا کے امیر مشتاق احمد خان

پشاور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔08 جنوری۔2016ء )جماعت اسلامی صوبہ خیبر پختونخوا کے امیر مشتاق احمد خان نے کہا ہے کہ اقتصادی راہداری منصوبہ میں تبدیلی خیبرپختونخوا کے عوام پر وفاقی حکومت کا ڈرون حملہ ہے گورنر کے پی کے اس کو باز رکھیں ورنہ صوبہ کی تمام سیاسی جماعتوں کو ساتھ ملاکر اسلام آبا کی جانب لانگ مارچ کریں گے ۔وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک نے مشترکہ مفادات کونسل کاجو اجلاس طلب کیا تھا وزیراعظم اسے فوری طورر پر بلائے۔

وہ جمعہ کے روز گورنر ہاؤس پشاور کے سامنے جماعت اسلامی کے زیر اہتمام پاک چین اقتصادی راہداری منصوبہ میں تبدیلی کے خلاف دھرنا سے خطاب کر رہے تھے۔دیگر مقررین میں سینئر صوبائی وزیر بلدیات عنایت اﷲ خان ،سینئر صوبائی وزیر اور قومی وطن پارٹی کے صوبائی چئیرمین سکندر خان شیرپاؤ ، جمعیت علماء اسلام س کے صوبائی امیر مولانا یوسف شاہ،پختونخوا اولسی تحریک کے طارق افغان ایڈوکیٹ کے علاوہ جماعت اسلامی اور دیگر پارٹیوں کے رہنماؤں نے بھی خطاب کیا۔

مشتاق احمد خان نے کہا کہ 28مئی کو وزیر اعظم کی صدارت میں آل پارٹیز کانفرنس کے ایجنڈے اور اعلامیہ پر اس کی حقیقی روح کے مطابق لفظ بہ لفظ عمل درآمد کیا جائے۔اقتصادی راہداری منصوبہ سے متعلق تمام دستاویزات،نقشے اب تک ہونے والے اقدامات،پیش رفت اور اس کے مختلف مراحل کے لیے مختص بجٹ کو عوام کے لیے مشتہر کیا جائے ،اسے پلاننگ کمیشن کی ویب سائٹس اور میڈیا پر جاری کیا جائے۔

انھوں نے کہا اقتصادی راہداری منصوبہ سے متعلق چاروں صوبائی وزرائے اعلیٰ کو اعتماد میں لیا جائے اور ان کے علاوہ قومی اسمبلی میں تمام جماعتوں کے پارلیمانی لیڈروں پر مشتمل کمیٹی بنا کر ان کو مشاورت کے عمل میں شامل کیا جائے۔وفاقی وزیر منصوبہ بندی اور ترقیات نے اپنے آپ کو نااہل ثابت کیا ہے راہداری منصوبہ ان کے بس کی بات نہیں وزیر اعظم اس منصوبہ کوا پنے ہاتھ میں لے کر چاروں صوبوں کے مفادات کو مد نظر رکھ غیر متنازعہ انداز میں کام آگے بڑھائیں۔

انھوں نے کہا کہ یہ خطہ کے تمام ممالک کے تین ارب انسانوں کی تقدیر بدلنے کا منصوبہ ہے ۔اس سے پورے خطہ پاکستان اور خیبر پختونخوا میں ترقی اور خوشحالی آئے گی۔انھوں نے کہا کہ وفاقی حکومت نے 28مئی کو قومی قیادت کے ساتھ جو وعدہ کیا تھا اسے پورا کرنے کے بجائے چند افراد اور سرمایہ داروں کے مفادات کے لیے اس منصوبہ کو متنازعہ بنایا جا رہا ہے۔

اس سلسلے میں خیبر پختونخوا اسمبلی اور حکومت نے مثالی کارکرکردگی دکھائی ہے ہم اس کی تائید

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

08/01/2016 - 21:16:18 :وقت اشاعت