آم کے باغات کی گلوبل گیپ سرٹیفیکیشن کیلئے 3لاکھ روپے فی فارم وفاقی وزارت سائنس ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ دسمبر

مزید تجارتی خبریں

وقت اشاعت: 30/12/2016 - 22:09:15 وقت اشاعت: 30/12/2016 - 20:58:20 وقت اشاعت: 30/12/2016 - 20:54:37 وقت اشاعت: 30/12/2016 - 20:54:34 وقت اشاعت: 30/12/2016 - 20:54:31 وقت اشاعت: 30/12/2016 - 20:41:21 وقت اشاعت: 30/12/2016 - 20:41:21 وقت اشاعت: 30/12/2016 - 20:30:29 وقت اشاعت: 30/12/2016 - 20:30:26 وقت اشاعت: 30/12/2016 - 20:29:12 وقت اشاعت: 30/12/2016 - 19:57:48
- مزید خبریں

ملتان

آم کے باغات کی گلوبل گیپ سرٹیفیکیشن کیلئے 3لاکھ روپے فی فارم وفاقی وزارت سائنس و ٹیکنالوجی گروورز کو امداد دے گی،ڈاکٹر حمید اللہ

ملتان(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 دسمبر2016ء)سرٹیفیکیشن انسنٹیو پروگرام (Certification Incentive Program) کے تحت آم کے باغات کی گلوبل گیپ سرٹیفیکیشن کیلئے 3لاکھ روپے فی فارم وفاقی وزارت سائنس و ٹیکنالوجی گروورز کو امداد دے گی۔ یہ بات ڈاکٹر حمید اللہ ڈائریکٹر مینگو ریسرچ انسٹیٹیوٹ نے سرٹیفیکیشن انسنٹیو پروگرام کے سلسلہ میں منعقدہ اجلاس کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے شرکاء کو مزید بتایا کہ گروورز اور ایکسپورٹرز کیلئے سیکرٹری زراعت پنجاب محمد محمود کا پیغام یہ ہے کہ امسال امریکہ میں مینگو برآمد کرنے کے مواقع بہت زیادہ ہیں کیونکہ امریکی ریاست اٹلانٹا میں اریڈیشن پلانٹ (Irridiation Plant) لگایا جارہا ہے۔ اس کے علاوہ ہوائی کارگو اخراجات میں کمی کیلئے بھی حکومت اقدامات کررہی ہے تاکہ امریکہ کیلئے آم کی ایکسپورٹ کے حجم کو بڑھا کر کثیر زرمبادلہ کمایا جاسکے۔

اس موقع پر انہوں نے مینگو گروورز کو کہا کہ آم کے باغات میں آبپاشی اور نائٹروجنی کھادوں کے استعمال سے اجتناب کیا جائے اور گلی سٹری گوبر کی کھاد کے استعمال کو وسط جنوری تک موخر کردیا جائے۔ موجودہ موسمی حالات نے آم کے پودے کی خوابیدگی پر بھی نمایاں اثرات مرتب کیے ہیں اگرچہ اس مرحلہ پر پودے پر کوئی بڑھوتری نظر نہیں آتی۔ امسال رات

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

30/12/2016 - 22:09:15 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان