کاشتکار گندم کی بھرپور پیداوار کیلئے فصل کے نازک مراحل پر پانی کی کمی نہ آنے دیں،محکمہ ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل دسمبر

مزید تجارتی خبریں

وقت اشاعت: 27/12/2016 - 18:04:30 وقت اشاعت: 27/12/2016 - 17:49:23 وقت اشاعت: 27/12/2016 - 17:45:19 وقت اشاعت: 27/12/2016 - 17:40:16 وقت اشاعت: 27/12/2016 - 17:38:14 وقت اشاعت: 27/12/2016 - 17:35:58 وقت اشاعت: 27/12/2016 - 17:35:57 وقت اشاعت: 27/12/2016 - 17:35:56 وقت اشاعت: 27/12/2016 - 16:59:14 وقت اشاعت: 27/12/2016 - 16:34:16 وقت اشاعت: 27/12/2016 - 16:34:13
- مزید خبریں

ملتان

کاشتکار گندم کی بھرپور پیداوار کیلئے فصل کے نازک مراحل پر پانی کی کمی نہ آنے دیں،محکمہ زراعت

ملتان۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 دسمبر2016ء)کاشتکار گندم سے بھرپور پیداوار کے حصول کیلئے فصل کی نشوونما اور بڑھوتری کے نازک مراحل پر پانی کی کمی نہ آنے دیں، گندم کے یہ نازک مراحل جھاڑ بننا ، گوبھ یا سٹہ نکلنے کے وقت ، دانے کی دودھیا حالت اور دانے کی گوند نما حالت ہیں،محکمہ زراعت کے ترجمان کے مطابق گندم کی فصل کو سب سے پہلے پانی کی اس وقت ضرورت ہوتی ہے جب پودا جھاڑ بناتا ہے، فصل کی یہ حالت بروقت کاشت کی گئی فصل میں کاشت سے 18 تا 25 دن بعد شروع ہوتی ہے،اگر اس موقع پر پانی نہ دیا جائے تو شگوفے کم بنیں گے اور سٹوں کی تعداد کم رہ جائے گی جس کا پیداوارپر برا اثر پڑے گا،گندم کی فصل میں آبپاشی کے لحاظ سے دوسرا اہم مرحلہ اس وقت شروع ہوتا ہے جب فصل گوبھ یا سٹے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

27/12/2016 - 17:49:23 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان