ملک سے لوڈشیڈنگ کے مستقل خاتمے کے لئے بجلی کے تقسیمی اور ترسیلی نظام کو بہتر بنایاجارہاہے،بجلی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر دسمبر

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 05/12/2016 - 22:43:32 وقت اشاعت: 05/12/2016 - 22:43:32 وقت اشاعت: 05/12/2016 - 22:43:30 وقت اشاعت: 05/12/2016 - 22:43:28 وقت اشاعت: 05/12/2016 - 22:15:48 وقت اشاعت: 05/12/2016 - 22:15:48 وقت اشاعت: 05/12/2016 - 22:15:48 وقت اشاعت: 05/12/2016 - 22:15:48 وقت اشاعت: 05/12/2016 - 22:13:33 وقت اشاعت: 05/12/2016 - 22:13:32 وقت اشاعت: 05/12/2016 - 22:13:32
پچھلی خبریں - مزید خبریں

ملتان

ملک سے لوڈشیڈنگ کے مستقل خاتمے کے لئے بجلی کے تقسیمی اور ترسیلی نظام کو بہتر بنایاجارہاہے،بجلی کی نئی پیداوارہر ماہ سسٹم میں شامل کی جائے گی،وزیرمملکت عابدشیرعلی کی میڈیا سے بات چیت

ملتان۔5 دسمبر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 دسمبر2016ء)وزیر مملکت برائے پانی وبجلی عابد شیر علی نے کہا ہے کہ ملک سے لوڈشیڈنگ کے مستقل خاتمے کے لئے بجلی کے تقسیمی اور ترسیلی نظام کو بہتر بنایاجارہاہے، اس مقصد کے لئے اربوں روپے کی سرمایہ کاری کی گئی ہے جس سے سسٹم میں طویل عرصے سے ہونے والی خرابیاں دور کی جارہی ہیں ، حکومت کے روشن پاکستان پروگرام کے تحت بجلی بحران کے خاتمہ کے لئے ہر ماہ نئی پیداہونے والی بجلی سسٹم میں شامل ہوگی ، وزیر اعظم محمد نوازشریف کے اعلان کے مطابق ہم مارچ2018؁ء میں لوڈشیڈنگ کا خاتمہ کردیں گے، ملک بھر میں سسٹم اپ گریڈیشن کا کام 80فیصد مکمل ہوچکاہے ، وہ میپکو ہیڈکوارٹر میں میڈیاسے گفتگو کررہے تھے ، رکن قومی اسمبلی محمد خان ڈاہا اور چیف ایگزیکٹو آفیسر میپکو انجینئر مسعود صلاح الدین بھی اس موقع پر موجود تھے، انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نے دیامیربھاشاڈیم کی تعمیر آئندہ سال شروع کرنیکا اعلان کردیاہے، یہ منصوبہ پی ایس ڈی پی کے تحت مکمل کیاجائیگا، داسو ڈیم پر بھی ورلڈ بینک کے مالی تعاون سے آئندہ سال کام شروع ہوجائیگا ، 1320میگاواٹ کے ساہیوال کول پاورپلانٹ اور 1320میگاواٹ کے پورٹ قاسم کول پاورپلانٹ 28ماہ کی قلیل مدت میں مکمل ہوں گے، 3600میگاواٹ کے بکھی، بلوکی اور حویلی بہادرشاہ کے آرایل این جی پاورپلانٹ بھی تکمیل کے مراحل میں ہیں ، نیلم جہلم ہائیڈروپاورپراجیکٹ سے 969میگاواٹ اور تربیلاڈیم فورتھ (توسیعی) منصوبے سے 1410میگاواٹ بجلی آئندہ سال سسٹم میں شامل کردیں گے ، انہوں نے کہا کہ مارچ2018؁ء کے بعد ملک میں وافر مقدار میں بجلی ہوگی ۔

پانی ، گیس اور کوئلہ سے بجلی کی پیداوار کے منصوبوں پر کام جاری ہے جس سے کاسٹ آف جنریشن کم ہوگی اور ملک کی 22کروڑسے زائد عوام کو فائدہ ہوگا، ہم نے مستقبل میں بجلی کی ضروریات پوری کرنے کے لئے پلان بنایاہے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

05/12/2016 - 22:15:48 :وقت اشاعت