روس کے تعاون سے پاکستان شنگھائی تعاون تنظیم کاممبر بن جائے گا ،روسی سفیر
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ نومبر

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 23/11/2016 - 22:43:40 وقت اشاعت: 23/11/2016 - 22:43:40 وقت اشاعت: 23/11/2016 - 22:43:40 وقت اشاعت: 23/11/2016 - 22:43:40 وقت اشاعت: 23/11/2016 - 22:43:40 وقت اشاعت: 23/11/2016 - 22:35:41 وقت اشاعت: 23/11/2016 - 22:35:41 وقت اشاعت: 23/11/2016 - 22:35:41 وقت اشاعت: 23/11/2016 - 22:35:41 وقت اشاعت: 23/11/2016 - 22:32:42 وقت اشاعت: 23/11/2016 - 22:32:42
پچھلی خبریں - مزید خبریں

ملتان

روس کے تعاون سے پاکستان شنگھائی تعاون تنظیم کاممبر بن جائے گا ،روسی سفیر

ملتان۔23 نومبر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 نومبر2016ء)پاکستان میں تعینات روس کے سفیر ایکسے یوری وچ دیدوف نے کہا ہے کہ پاکستان روس کے تعاون سے شنگھائی تعاون تنظیم کاممبر بن جائے گا جبکہ روسی حکومت پاکستانی طلباء وطالبات کے لیے جدید اور اعلی تعلیم کے حصول کیلئے سکالرشپ کی تعداد بھی بڑھا رہی ہے۔ایوان تجارت وصنعت ملتان میں روسی سیکرٹری تجارت یوری کازلوف اور دیگر کے ہمراہ خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ میں دوسری دفعہ ملتان آرہاہوں اب ملتان پہلے سے بہت تبدیل اور ترقی کرچکا ہے۔

یہاں بین الاقوامی ایئرپورٹ بن چکا ہے اور اب خطے میں زرعی اورصنعتی سیکٹرز میں سرمایہ کاری کے بہترین مواقع ہیں۔انہوںنے کہاکہ پاکستان اورروس کے تعلقات بہت پرانے لیکن معاشی میدان میں جمود تھا اب ہم نے اس جمود کوتوڑا ہے اور تعلقات کو ہرسیکٹر میں بڑھارہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ مظفرگڑھ تھرمل پاور اسٹیشن کی اپ گریڈیشن ،جامشورو پاورہائوس میں توسیع اور اس کی اپ گریڈیشن کے علاوہ انرجی کے دیگرپراجیکٹس میں ہمارا تعاون شامل ہے۔

سی پیک منصوبے اور سلک روٹ جوکہ چائنہ ،قازقستان اور روس کو ملانے کے لئے تعمیر کیاجارہاہے میں ہمارے چینی دوستوں نے باہمی تعاون کاعندیہ دیا ہے۔چینی دوستوں کاکہنا ہے کہ سی پیک منصوبے کے تحت پاکستان میں انرجی سیکٹر کے منصوبوں میں روسی تعاون فراہم کیاجاسکتا ہے۔انہوںنے کہاکہ پاکستان اور روس کے تجارتی وصنعتی شعبوں میں ڈائریکٹ رابطوں کافقدان دونوں ممالک کے تجارتی ومعاشی تعلقات میں کمی کابڑا سبب ہے۔

اس کے علاوہ دونو ں ممالک کے درمیان بہت سے مسائل اوررکاوٹیں خودساختہ اورمصنوعی ہیں۔پاکستان اورروس کی مشترکہ فوجی مشقیں اوربہت سے منصوبوں میں تعاون ہمارے بڑھتے ہوئے تعلقات کی نشانی ہے ۔روس پاکستان کے ا نرجی سیکٹر میں نواب شاہ لاہور گیس پائپ لائن جو2.5بلین ڈالر کی لاگت سے تعمیر کی ہورہی ہے جیسا منصوبہ مکمل کرے گا۔اسی طرح پاکستان کی قومی اسمبلی کے سپیکر ایاز صادق بھی آج روس میں ہونے والی میٹنگ میں شرکت کیلئے ماسکو روانہ ہوگئے ہیں ۔

اسی طرح اب وزارت خارجہ کی سطح پربھی ہمارے تعلقات

مکمل خبر پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

23/11/2016 - 22:35:41 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان