حکومت کے بلند و بانگ دعوؤں کے باوجود لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ دس گھنٹے تک محدود نہ ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل مئی

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 06/05/2014 - 20:51:40 وقت اشاعت: 06/05/2014 - 20:36:22 وقت اشاعت: 06/05/2014 - 20:07:29 وقت اشاعت: 06/05/2014 - 19:46:06 وقت اشاعت: 06/05/2014 - 19:46:06 وقت اشاعت: 06/05/2014 - 19:02:43 وقت اشاعت: 06/05/2014 - 19:02:43 وقت اشاعت: 06/05/2014 - 18:57:35 وقت اشاعت: 06/05/2014 - 18:57:35 وقت اشاعت: 06/05/2014 - 18:57:35 وقت اشاعت: 06/05/2014 - 18:55:25
پچھلی خبریں - مزید خبریں

لاہور

حکومت کے بلند و بانگ دعوؤں کے باوجود لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ دس گھنٹے تک محدود نہ ہو سکا،شارٹ فال 3500میگا واٹ کی سطح پر پہنچنے کے بعد غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ بھی بڑھ گیا ،مظاہرے جاری ،شہریوں اور تاجروں نے بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں کے دفاتر کا گھیراؤ کرنے کا اعلان کردیا

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔6مئی۔2014ء)حکومت کے بلند و بانگ دعوؤں کے باوجود لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ دس گھنٹے تک محدود نہ ہو سکا ،شارٹ فال 3500میگا واٹ کی سطح پر پہنچنے کے بعد غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ بھی بڑھ گیا ،بجلی کی طویل بندش کے خلاف شہریوں اور تاجروں نے شدید احتجاج کرتے ہوئے بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں کے دفاتر کا گھیراؤ کرنے کا اعلان کردیا ۔

این ٹی ڈی سی کے ترجمان کی طرف سے جاری کردہ اعدادوشمار کے مطابق بجلی کی پیداوار10700میگا واٹ جبکہ اسکے مقابلے میں طلب بڑھ کر 14200میگا واٹ کی سطح پر پہنچ گئی ہے ۔ ہائیڈل سے 3400‘تھرمل سے 1220جبکہ آئی پی پیز سے 6080میگا واٹ بجلی کی پیداوار حاصل ہوئی ۔ ترجمان کے مطابق ارسا نے تربیلا اور منگلا ڈیم سے پانی کا اخراج کم کردیا ہے جبکہ چشمہ نیوکلیئر پاور پلانٹس کی پیداوار بھی سسٹم سے باہر ہے۔

ذرائع کے مطابق بجلی کی طلب بڑھنے سے شارٹ فال حکومتی اعدادوشمار سے کہیں زیادہ ہے جسکی وجہ سے لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ حکومتی یقین دہانیوں سے تجاوز کر گیا ہے۔ وزارت پانی وبجلی کے ذمہ داران کی طرف سے لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

06/05/2014 - 19:02:43 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان