احمد شہزاد کا کپتانی کی باتیں ذہن پر سوار کرنے سے گریز
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ مئی

لاہور

احمد شہزاد کا کپتانی کی باتیں ذہن پر سوار کرنے سے گریز

span class="location">لاہور(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 2مئی 2014ء)
احمد شہزاد کپتانی کی باتیں ذہن پر سوار کرنے سے گریز کر رہے ہیں،ان کے مطابق قومی ٹوئنٹی 20 اسکواڈ کی قیادت اعزازہوگی لیکن جذبات کی رو میں بہہ کر توجہ منتشر نہیں کرنا چاہتا۔ بطور پروفیشنل کرکٹر میری مکمل توجہ اپنے کھیل پر مرکوز ہے،ملک کیلیے 100فیصد کارکردگی دکھانا سب سے اہم ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق محمد حفیظ کے ٹوئنٹی 20 اسکواڈکی قیادت سے استعفے کے بعد شاہد آفریدی، احمد شہزاد اور عمراکمل کو مضبوط امیدواروں میں شمار کیا جا رہا ہے۔نوجوان اوپنر نے کہا کہ پاکستان کی نمائندگی اعزاز کی بات ہے، ملکی قیادت سے کسی بھی کھلاڑی کا ایک سنہرا خواب پورا ہوتا ہے لیکن میں کپتانی کیلیے نام لیے جانے پر جذبات کی رو میں بہہ کر اپنی توجہ منتشر نہیں کرنا چاہتا، ایک پروفیشنل کھلاڑی کی حیثیت سے میرا فرض ٹیم اور ملک کیلیے 100فیصد کارکردگی دکھانا ہے، میری اولین ترجیح عمدہ پرفارمنس سے فتوحات میں اہم کردار ادا کرنا ہوگی، باقی تمام چیزوں کی حیثیت ثانوی ہے۔

احمد شہزاد نے کہا کہ ورلڈ ٹوئنٹی 20میں اپنی کارکردگی

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

02/05/2014 - 12:08:06 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان