ملک میں کونسی جمہوریت ہے جسے عمران خان ڈی ریل نہ کرنے کی بات کرتے ہیں‘ ڈاکٹر طاہر ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات مئی

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 01/05/2014 - 22:31:48 وقت اشاعت: 01/05/2014 - 22:31:48 وقت اشاعت: 01/05/2014 - 22:21:04 وقت اشاعت: 01/05/2014 - 22:21:04 وقت اشاعت: 01/05/2014 - 22:06:36 وقت اشاعت: 01/05/2014 - 22:06:36 وقت اشاعت: 01/05/2014 - 22:03:27 وقت اشاعت: 01/05/2014 - 21:41:57 وقت اشاعت: 01/05/2014 - 21:41:57 وقت اشاعت: 01/05/2014 - 21:41:57 وقت اشاعت: 01/05/2014 - 21:14:48
پچھلی خبریں - مزید خبریں

لاہور

ملک میں کونسی جمہوریت ہے جسے عمران خان ڈی ریل نہ کرنے کی بات کرتے ہیں‘ ڈاکٹر طاہر القادری،11مئی کا ملک گیر احتجاج پر امن عوامی انقلاب کیلئے اقامت کا دن ،اسکے بعد جماعت کیلئے صف بندی شروع ہو جائیگی،اب کسی طرح کے مذاکرات نہیں ہونگے ،اس روز ایک پتہ بھی نہیں ٹوٹے گا،ریاستی جبر آزمایا گیا تو حکمران اپنی سیاسی زندگی کے دن کم کر لینگے، سربراہ پاکستان عوامی تحریک

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔1مئی۔2014ء)پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا ہے کہ 11مئی 2014ء کا ملک گیر احتجاج پر امن عوامی انقلاب کیلئے اقامت کا دن ہے اور اسکے بعد جماعت کے لئے صف بندی شروع ہو جائیگی ، حکمرانوں پر واضح کر دینا چاہتا ہوں کہ اب کسی طرح کے مذاکرات نہیں ہوں گے ، 11مئی کو سمندر کے سمندر سڑکوں پر ہونگے لیکن ایک پتہ بھی نہیں ٹوٹے گا ، اگر ریاستی جبر یا دہشتگردی کو آزمایا گیا تو جو چار دن بعد حتمی کال آنی ہے وہ اس سے پہلے ہی آ جائیگی اور اسکے بعد قیادت کیلئے فوری طور پر وطن واپس پہنچ جاؤں گا، ملک میں کونسی جمہوریت جسے عمران خان ڈی ریل نہ کرنے کی بات کرتے ہیں ۔

ان خیالات کا اظہارا نہوں نے جمعرات کے روز ملک کے مختلف مقامات پر منعقدہ ورکرز کنونشن سے ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ ڈاکٹر طاہر القادری نے کارکنوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ اب وہ قیادت کریں اور پر امن انقلاب کے لئے اپنا آرام حرام کرکے ایک ایک لمحہ خرچ کریں اور ممکن ہے کہ اسی دن فیصلہ ہو جائے ۔ جب میں 11مئی کا منظر دیکھوں گا تو اسی دن اعلان کر دوں گا ۔

انہوں نے کہا کہ میں جمہوریت کا پیرو کار ہوں لیکن میں اس جمہوریت کا قائل ہوں جسکی بنیاد ابو بکر صدیق نے رکھی میں اس جمہوریت کا قائل ہوں جس کی بنیاد عمر فاروق نے رکھی ۔ انہوں نے کہا کہ آج بات کی جاتی ہے کہ جمہوریت کو ڈیل نہیں ہونے دیں گے ۔ عمران خان بھی یہی کہہ رہے ہیں لیکن میں ان سے پوچھتا ہوں ملک میں کونسی جمہوریت ہے جو ڈی ریل نہیں ہو گی ، ملک میں جمہوریت نہیں بلکہ ریاستی ڈاکہ اور سیاسی دہشتگردی ہے ۔

میں عمران خان سے بھی پوچھنا چاہتا ہوں کہ انہیں کب سمجھ آئے گی ۔ غریبوں کے خون

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

01/05/2014 - 22:06:36 :وقت اشاعت