تحفظ پاکستان آرڈیننس آئین سے متصادم اور بنیادی حقوق کی نفی کرتاہے، فاروق ستار
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل اپریل

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 08/04/2014 - 16:04:08 وقت اشاعت: 08/04/2014 - 16:00:24 وقت اشاعت: 08/04/2014 - 16:00:00 وقت اشاعت: 08/04/2014 - 14:34:14 وقت اشاعت: 08/04/2014 - 14:30:21 وقت اشاعت: 08/04/2014 - 13:21:25 وقت اشاعت: 08/04/2014 - 13:21:25 وقت اشاعت: 08/04/2014 - 13:01:28 وقت اشاعت: 08/04/2014 - 12:44:14 وقت اشاعت: 08/04/2014 - 12:21:13 وقت اشاعت: 08/04/2014 - 12:21:13
پچھلی خبریں - مزید خبریں

لاہور

تحفظ پاکستان آرڈیننس آئین سے متصادم اور بنیادی حقوق کی نفی کرتاہے، فاروق ستار

span class=\"location\">لاہور(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 8اپریل 2014ء)
متحدہ قومی مومنٹ کے رہنما فاروق نے تحفظ پاکستان آرڈیننس کو کالا قانون قرار دیتے ہوئے اسے آئین سے متصادم اور بنیادی حقوق کی نقی قرار دے دیا ہے۔لاہور میں ایک تقریب سے خطاب کرتے فاروق ستار کا کہنا تھا کہ آج ملک میں مراعات اور مفادات کی سیاست ہو رہی ہے، ماورائے آئین طالبان اور دہشت گرد رہا کئے جا رہے ہیں، آرمی چیف کے بیان کو سنجیدگی سے لینا چاہیے، آئی ایس پی آر ہی آرمی چیف کے بیان کی وضاحت کر سکتی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ تحفظ پاکستان آرڈیننس کالا قانون ہے، اسمبلی سے پاس کرانے سے پہلے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

08/04/2014 - 13:21:25 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان