یقین کامل ہے نوجوان پاکستان کی تقدیر بدل کر دم لیں گے، ملک کو عظیم سے عظیم تر بنائیں ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات مارچ

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 27/03/2014 - 21:05:38 وقت اشاعت: 27/03/2014 - 21:04:29 وقت اشاعت: 27/03/2014 - 20:34:11 وقت اشاعت: 27/03/2014 - 19:11:17 وقت اشاعت: 27/03/2014 - 19:11:17 وقت اشاعت: 27/03/2014 - 19:05:15 وقت اشاعت: 27/03/2014 - 18:55:51 وقت اشاعت: 27/03/2014 - 18:55:51 وقت اشاعت: 27/03/2014 - 18:55:51 وقت اشاعت: 27/03/2014 - 18:54:42 وقت اشاعت: 27/03/2014 - 18:54:42
پچھلی خبریں - مزید خبریں

لاہور

یقین کامل ہے نوجوان پاکستان کی تقدیر بدل کر دم لیں گے، ملک کو عظیم سے عظیم تر بنائیں گے‘ محمد شہباز شریف،طالبات ڈگریاں حاصل کرکے گھروں میں بیٹھنے کی بجائے عملی میدان میں آئیں، اپنی قابلیت اور صلاحیت کا لوہا منوائیں، بجلی کے اندھیروں نے قومی معیشت کا جنازہ نکال دیا، کرپشن نے ملک کو تباہی کے دہانے پر لا کھڑا کیا، ہمیں ملکر ملک کو مسائل کی دلدل سے نکالنا ہے،دنیا میں عزت و وقار سے جینے کیلئے معاشی طور پر مضبوط اور جدید علوم پر دسترس حاصل کرنا ہوگی‘ وزیراعلیٰ کا فاطمہ جناح کالج فار ویمن کے کانووکیشن سے خطاب

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔27مارچ۔2014ء)وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ پاکستان کے نوجوان جس طرح مختلف شعبوں میں نمایاں کارکردگی کا مظاہرہ کر رہے ہیں، مجھے یقین کامل اور امید واثق ہے کہ نوجوان پاکستان کی تقدیر بدل کر دم لیں گے اور ملک کو اقوام عالم میں عظیم تر بنائیں گے، ملک کو عظیم سے عظیم تر بنانے کیلئے طالبات کو بھی عملی میدان میں نکلنا ہوگا،طالبات کو ڈگریاں حاصل کرکے مختلف شعبوں میں اپنی قابلیت اور صلاحیت کا لوہامنوانا ہوگا اور یہی پاکستان کی ترقی کا راستہ ہے۔

وہجمعرات کے روز یہاں گورنمنٹ فاطمہ جناح کالج فار ویمن چونا منڈی میں چھٹے کانووکیشن سے خطاب کر رہے تھے۔ صوبائی وزیر تعلیم رانا مشہود احمد خان، مشیر صحت خواجہ سلمان رفیق، اراکین اسمبلی، پنجاب یونیورسٹی کے وائس چانسلر، جسٹس (ر) ناصرہ جاوید، سیکرٹری ہائیر ایجوکیشن، کالج فیکلٹیز، پروفیسرز، مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والی معزز شخصیات، طالبات اور ان کے والدین کی بڑی تعداد نے کانووکیشن میں شرکت کی۔

وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے کانووکیشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میں دل کی اتھاہ گہرائیوں سے آج کانووکیشن میں ڈگریاں اور میڈلز حاصل کرنے والی طالبات کو مبارکباد پیش کرتا ہوں۔ طالبات کے چہرے پر خوشی اور پیشانیوں پر امید دیکھ کر بخوبی اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ پاکستان کا مستقبل انتہائی روشن ہے اور یہی وہ روشن مستقبل کی جانب سفر ہے جس کی بنیاد 23 مارچ 1940 کو قائداعظم کی ولولہ انگیز قیادت میں یہاں سے چند قدم کے فاصلے پر منٹو پارک کے تاریخی اجتماع میں رکھی گئی تھی۔

قرارداد لاہور کی منظوری کے وقت تمام مسلمان بغیر کسی رنگ و نسل کے ایک پلیٹ فارم پر جمع ہوئے اور تاریخی جدوجہدکے ذریعے اقبال کے تصور کو عملی شکل دی گئی۔ ہمارے بزرگوں نے قیام پاکستان کیلئے عظیم قربانیاں دیں اور اللہ تعالیٰ نے انعام کے طور پر یہ عظیم وطن ہمیں عطا کیا لیکن افسوس کی بات ہے کہ اس قرارداد پر ہم نے بحیثیت قوم عمل نہیں کیا۔

انہوں نے کہا کہ الگ وطن اس لئے حاصل نہیں کیا گیا تھا کہ یہاں پر ناانصافی، سفارش ، کرپشن اور دھونس دھاندلی سکہ رائج الوقت ہو۔ میرٹ اور انصاف کی دھجیاں اڑائی جائیں۔ پاکستان حاصل کرنے کا مقصد میرٹ، انصاف اور سب کو آگے بڑھنے کے یکساں مواقع کی فراہمی تھا۔ یقینا جن لوگوں نے وطن عزیز کیلئے اپنی جانوں کی قربانیاں دیں آج ان کی روحیں قبروں میں تڑپ رہی ہوں گی۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان گونا گوں مسائل سے دوچار ہے۔ بجلی کے اندھیروں نے قومی معیشت کا جنازہ نکال دیا ہے جبکہ کرپشن نے ملک کو تباہی کے دہانے پر لا کھڑا کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی آبادی کا 60 فیصد 15 سے 30 سال کے نوجوانوں پر مشتمل ہے جنہیں جدید علوم سے آراستہ کرکے ترقی و خوشحالی کی منزل حاصل کی جاسکتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ تاریخ عالم ایسی مثالوں سے بھری پڑی ہے جہاں اقوام نے محنت اور جدوجہد کے ذریعے ترقی کا سفر طے کیا اور دنیا میں باوقار مقام حاصل کیا۔

اگر چین، جرمنی، جاپان اور دیگر

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

27/03/2014 - 19:05:15 :وقت اشاعت