لاہور ہائیکورٹ کا ینگ ڈاکٹرز کی برطرفی کیخلاف حکم امتناعی جاری
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر مارچ

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 10/03/2014 - 12:51:29 وقت اشاعت: 10/03/2014 - 12:17:18 وقت اشاعت: 10/03/2014 - 12:17:18 وقت اشاعت: 10/03/2014 - 11:55:36 وقت اشاعت: 10/03/2014 - 11:55:36 وقت اشاعت: 10/03/2014 - 11:34:00 وقت اشاعت: 10/03/2014 - 11:34:00 وقت اشاعت: 10/03/2014 - 11:31:25 وقت اشاعت: 10/03/2014 - 11:31:25 وقت اشاعت: 10/03/2014 - 11:31:25 وقت اشاعت: 10/03/2014 - 11:18:40
پچھلی خبریں -

لاہور

لاہور ہائیکورٹ کا ینگ ڈاکٹرز کی برطرفی کیخلاف حکم امتناعی جاری

font color=\"#333333\">لاہور(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 10مارچ 2014ء) لاہور ہائیکورٹ نے ممکنہ طور پر 250 ینگ ڈاکٹرز کی برطرفی کیخلاف حکم امتناعی جاری کر دیا۔ لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس خالد محمود خان نے کیس کی سماعت شروع کی تو عدالت کے روبرو میڈیکل آفیسر اور ینگ ڈاکٹرز کی جانب سے بتایا گیا کہ پنجاب حکومت زبردستی ان سے ایسے حلف ناموں پر دستخط کروانا چاہتی ہے جس کے مطابق غیر ملکی خاتون سے شادی پر پابندی ہو گی اور 3 سال تک ینگ ڈاکٹرز نہ چھٹی لے سکتے ہیں

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

10/03/2014 - 11:34:00 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان