قوم کو اپنے عسکری اور سیاسی اداروں پر مکمل اعتماد ہے،معاملہ یہ ہے دہشتگرد کون ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات فروری

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 27/02/2014 - 22:15:33 وقت اشاعت: 27/02/2014 - 22:15:33 وقت اشاعت: 27/02/2014 - 20:46:52 وقت اشاعت: 27/02/2014 - 20:34:01 وقت اشاعت: 27/02/2014 - 20:34:01 وقت اشاعت: 27/02/2014 - 20:34:01 وقت اشاعت: 27/02/2014 - 20:33:04 وقت اشاعت: 27/02/2014 - 20:33:04 وقت اشاعت: 27/02/2014 - 20:06:38 وقت اشاعت: 27/02/2014 - 20:06:38 وقت اشاعت: 27/02/2014 - 19:59:20
پچھلی خبریں - مزید خبریں

لاہور

قوم کو اپنے عسکری اور سیاسی اداروں پر مکمل اعتماد ہے،معاملہ یہ ہے دہشتگرد کون اور طالبان کون ہیں ‘ سید منور حسن ،کراچی کے آپریشن کو سات ماہ کا عرصہ گزر چکاہے لیکن اس کے حوصلہ افزا نتائج سامنے نہیں آئے ، اسے ریویو کرنے کی ضرورت ہے، دہشتگردوں کے خلاف جو بھی کاروائی کی جائے گی ، پوری قوم اس کی حمایت کریگی ‘ امیر جماعت اسلامی کا کسان کنونشن سے خطاب /میڈیا سے گفتگو

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔26 فروری ۔2014ء) امیر جماعت اسلامی سیدمنورحسن نے کہاہے کہ عسکری قیادت کی طرف سے کچھ طالبان گروپوں کو ”را “اور” سی آئی اے“ کی سرپرستی حاصل ہونے کا انکشاف کیا گیاہے ، اس سے قبل بلوچستان کے حوالے سے بھی بھارتی و امریکی سازشیں بے نقاب ہو چکی ہیں جس کی طرف جماعت اسلامی نے بھی بارہا توجہ دلائی ہے ، حکومت کی طرف سے ان گروپوں کیخلاف کاروائی کرنے اور دیگر طالبان گروپوں سے مذاکرات کرنے کی پالیسی قومی امنگوں کی عکاس ہے ، ملک و قوم کے لیے یہ ایک فیصلہ کن مرحلہ ہے، فیصلہ کن معاملہ یہ ہے کہ دہشتگرد کون ہے اور طالبان کون ہیں ، قوم کو اپنے عسکری اور سیاسی اداروں پر مکمل اعتماد ہے ، دہشتگردوں کے خلاف جو بھی کاروائی کی جائے گی ، پوری قوم اس کی حمایت کرے گی ، بے اختیار کمیٹیاں اچھے بیانات تو دے سکتی ہیں مگر مسائل حل کرنے میں بھر پور کردار ادا نہیں کر سکتیں ،دونوں کمیٹیاں اپنا اجلاس بلا کر حکومت اور طالبان کو مذاکرات کی میز پر بٹھانے کی کوشش کریں، کراچی کے آپریشن کو سات ماہ کا عرصہ گزر چکاہے لیکن اس کے حوصلہ افزا نتائج سامنے نہیں آئے ، اسے ریویو کرنے کی ضرورت ہے۔

ان خیالات کااظہار انہوں نے منصورہ میں جاری تین روزہ کسان کنونشن کے دوسرے روز خطاب اور بعد ازاں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر سیکریٹری اطلاعات جماعت اسلامی پاکستان محمد انور نیازی ،قیصر شریف اور فرحان شوکت بھی موجود تھے ۔سیدمنورحسن نے کہاکہ الطاف حسین کا بیان سراسرجمہوریت کی نفی ہے جس نے آئین کی دھجیاں بکھیر دی ہیں ۔

ایم کیو ایم حکومت میں تو نہیں لیکن پارلیمنٹ میں تو موجود ہے۔ الطاف حسین کو اپنا بیان واپس لیناچاہیے اور ملک میں جمہوریت کو پنپنے کا موقع دیناچاہیے۔ فوج ایک منظم ادارہ ہے امید ہے وہ الطاف حسین کے ان بیانات پر کان نہیں دھرے گی اور اس

مکمل خبر پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

27/02/2014 - 20:34:01 :وقت اشاعت