پنجاب اسمبلی کی پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا از خود اختیارات کیلئے حکومت سے بات کرنے ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل فروری

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 04/02/2014 - 21:52:04 وقت اشاعت: 04/02/2014 - 21:28:18 وقت اشاعت: 04/02/2014 - 20:21:46 وقت اشاعت: 04/02/2014 - 20:21:46 وقت اشاعت: 04/02/2014 - 20:21:46 وقت اشاعت: 04/02/2014 - 20:19:56 وقت اشاعت: 04/02/2014 - 20:19:56 وقت اشاعت: 04/02/2014 - 20:10:38 وقت اشاعت: 04/02/2014 - 20:10:38 وقت اشاعت: 04/02/2014 - 20:10:38 وقت اشاعت: 04/02/2014 - 20:08:54
- مزید خبریں

لاہور

پنجاب اسمبلی کی پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا از خود اختیارات کیلئے حکومت سے بات کرنے کا فیصلہ ،تونسہ بیراج کے توسیعی منصوبے کی بروقت تعمیر نہ ہونیکی وجہ سے2500ملین سے زائد کے اضافی خراجات کے انکشاف پر برہمی کااظہار ،صوبے کا خزانہ کسی کی جاگیر نہیں ،منصوبوں میں ردوبدل کرکے کمیشن بنائی جاتی ہے جو غر یب عوام کے ساتھ ظلم ہے‘ میاں محمود الرشید

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔4 فروری ۔2014ء)پبلک اکاؤنٹس کمیٹی ون کے چےئر مین میاں محمود الر شید نے تونسہ بیراج کے توسیعی منصوبے کے ڈائزین میں بار بار تبد یلی اور بروقت تعمیر نہ ہونے کی وجہ سے2500ملین روپے سے زائد کے اضافی خراجات کے انکشاف پر سخت اظہار برہمی کااظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ صوبے کا خزانہ کسی کی جاگیر نہیں ،منصوبوں میں ردوبدل کرکے کمیشن بنائی جاتی ہے جو غر یب عوام کے ساتھ ظلم ہے ،چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی نے کہا ہے کہ از خود نوٹس کے اختیارات کیلئے بھی حکومت سے بات کی جائے گی ۔

پبلک اکاؤنٹس کمیٹی ون کا اجلاس میاں محمود الرشید کی صدارت میں منعقد ہوا ۔اجلاس میں کمیٹی کے ممبران ڈاکٹر وسیم اختر، سبطین خان، قاضی عدنان ، میاں رفیق احمد، وارث کلو سمیت دیگر نے شرکت کی ۔ جس میں آڈیٹر جنرل اصغرعلی اور ڈی جی آڈٹ ورکس افتخار احمد نے کمیٹی کو مختلف منصوبوں کے آڈٹ کے حوالے سے بریفنگ دی ۔اجلاس کو بتایا گیاکہ تونسہ بیراج کا منصوبہ 779ملین روپے کی لاگت سے دسمبر 2004ء میں مکمل ہونا تھا لیکن منصوبے کے ڈیزائن میں بار بار تبدیلی اور تاخیر کی وجہ سے منصوبے پر 10ہزار 2سو 98ملین کے اخراجات ہوئے اور منصوبہ 2009-10میں مکمل ہوا ہے ۔

کمیٹی کے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

04/02/2014 - 20:21:46 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان