بلدیاتی حلقہ بندیوں کیلئے حکومت نہیں الیکشن کمیشن مجاز ہے ،ہائیکورٹ کے لارجر ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر فروری

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 03/02/2014 - 21:11:51 وقت اشاعت: 03/02/2014 - 21:11:51 وقت اشاعت: 03/02/2014 - 21:10:49 وقت اشاعت: 03/02/2014 - 21:10:49 وقت اشاعت: 03/02/2014 - 21:10:49 وقت اشاعت: 03/02/2014 - 21:10:17 وقت اشاعت: 03/02/2014 - 21:10:17 وقت اشاعت: 03/02/2014 - 21:09:20 وقت اشاعت: 03/02/2014 - 21:09:20 وقت اشاعت: 03/02/2014 - 21:09:20 وقت اشاعت: 03/02/2014 - 21:08:33
پچھلی خبریں - مزید خبریں

لاہور

بلدیاتی حلقہ بندیوں کیلئے حکومت نہیں الیکشن کمیشن مجاز ہے ،ہائیکورٹ کے لارجر بنچ کا تفصیلی فیصلہ جاری ،جسٹس منصور علی شاہ کی سربراہی میں لارجر بنچ نے 91صفات پر مشتمل تفصیلی فیصلہ جاری کیا،جسٹس فرخ عرفان خان نے دو صفحات پر مشتمل اضافی نوٹ بھی لکھا ہے،الیکشن کمیشن حلقہ بندیوں اور انتخابات کیلئے اقدامات کرے ،امیدواروں اور ووٹرز کے سمجھنے کیلئے فیصلے کو اردو ترجمے کیساتھ مشتہر کیا جائے

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔3 فروری ۔2014ء)لاہور ہائیکورٹ نے بلدیاتی انتخابات کیلئے کی گئی حلقہ بندیوں کو کالعدم قرار دینے کے کیس کا تفصیلی فیصلہ جاری کر دیا ، جسٹس منصور علی شاہ کی سربراہی میں لارجر بنچ نے 91صفات پر مشتمل تفصیلی فیصلہ جاری کیا ہے جبکہ جسٹس فرخ عرفان خان نے دو صفحات پر مشتمل اضافی نوٹ بھی لکھا ہے ، عدالت نے قرار دیا ہے کہ الیکشن کمیشن بلدیاتی انتخابات کے لئے حلقہ بندیوں کا مجاز ہے ،الیکشن کمیشن حلقہ بندیاں اور انتخابات کیلئے اقدامات کرے جبکہ فیصلے کو اردو ترجمے کے ساتھ مشتہر کیا جائے تاکہ امیدوار وں اور ووٹرز کو سمجھنے میں آسانی رہے ۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس منصور علی شاہ کی سربراہی میں لارجر بنچ نے 31دسمبر 2013ء کو پنجاب حکومت کی طرف سے بلدیاتی انتخابات کیلئے کی جانیوالی حلقہ بندیوں کو کالعدم قرار دینے کا مختصر فیصلہ دیا تھا ۔ سوموار کے روز کیس کا 91صفحات پر مشتمل تفصیلی فیصلہ جاری کر دیا گیا ہے ۔ فیصلے میں کہا گیا ہے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

03/02/2014 - 21:10:17 :وقت اشاعت