بی سی سی آئی پر اعتبار نہیں کیا جا سکتا ، توقیرضیاء
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ جنوری

مزید کھیلوں کی خبریں

وقت اشاعت: 29/01/2014 - 14:07:58 وقت اشاعت: 29/01/2014 - 14:06:17 وقت اشاعت: 29/01/2014 - 14:04:47 وقت اشاعت: 29/01/2014 - 14:04:47 وقت اشاعت: 29/01/2014 - 14:03:20 وقت اشاعت: 29/01/2014 - 14:03:20 وقت اشاعت: 29/01/2014 - 14:03:20 وقت اشاعت: 29/01/2014 - 14:00:07 وقت اشاعت: 29/01/2014 - 13:33:27 وقت اشاعت: 29/01/2014 - 13:33:27
پچھلی خبریں -

لاہور

بی سی سی آئی پر اعتبار نہیں کیا جا سکتا ، توقیرضیاء

لاہور (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 29 جنوری 2014ء)پاکستان کرکٹ بورڈ کے سابق چیئرمین لیفٹیننٹ جنرل (ریٹائرڈ) توقیر ضیا ء نے کہا ہے کہ بھارتی کرکٹ بورڈ کی پاکستان کے ساتھ دو طرفہ سیریز کھیلنے کی پیشکش اس وقت یقیناپرکشش معلوم ہوتی ہے تاہم اس بات کی کیا ضمانت ہے کہ وہ پاکستان کے ساتھ ضرور کھیلے گا؟برطانوی نشریاتی ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے توقیرضیا نے کہا کہ تین کرکٹ بورڈوں کے اس مجوزے مسودے کی منظوری اور اجارہ داری قائم ہوجانے سے پاکستان کرکٹ بورڈ کو مالی طور پر تین کروڑ ڈالرز کا نقصان ہوگا کیونکہ پاکستان کرکٹ بورڈ کو ابھی بھی 12 کروڑ ڈالر مل رہے ہیں اور جب ان تین ملکوں کی اجارہ داری قائم ہوجائے گی تو اسے ملنے والی رقم نو کروڑ ڈالر ہوگی۔

توقیرضیا نے اس بات پر افسوس ظاہر کیا کہ آئی سی سی اور بین الاقوامی کرکٹ بھارتی کرکٹ کی کرپشن پر آنکھیں بند کر کے بیٹھی ہے۔ آئی پی ایل میں جو کچھ بھی ہوا اس پر آئی سی سی انٹی کرپشن یونٹ کچھ بھی نہ کرسکا وہ پہلے اس معاملے کو کلیئر کرے۔ سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ ایک ایسا کرکٹ بورڈ جس میں اتنی زیادہ کرپشن

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

29/01/2014 - 14:03:20 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان