سندھ اسمبلی نے لاوٴڈ اسپیکرز اور دیگر ساوٴنڈ سسٹمز کو ضابطے کا بل اتفاق رائے سے ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ اپریل

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 10/04/2015 - 20:49:35 وقت اشاعت: 10/04/2015 - 20:49:35 وقت اشاعت: 10/04/2015 - 20:49:35 وقت اشاعت: 10/04/2015 - 20:42:27 وقت اشاعت: 10/04/2015 - 20:42:26 وقت اشاعت: 10/04/2015 - 20:39:31 وقت اشاعت: 10/04/2015 - 20:39:31 وقت اشاعت: 10/04/2015 - 20:39:31 وقت اشاعت: 10/04/2015 - 20:37:24 وقت اشاعت: 10/04/2015 - 20:35:03 وقت اشاعت: 10/04/2015 - 20:35:03
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

سندھ اسمبلی نے لاوٴڈ اسپیکرز اور دیگر ساوٴنڈ سسٹمز کو ضابطے کا بل اتفاق رائے سے منظور کر لیا

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔10 اپریل۔2015ء) سندھ اسمبلی نے جمعہ کو لاوٴڈ اسپیکرز اور دیگر ساوٴنڈ سسٹمز کو ضابطے میں لانے کے لیے ایک بل اتفاق رائے سے منظور کر لیا ، جو ” سندھ ساوٴنڈ سسٹم ( ریگولیشن ) ایکٹ 2015ء “ کہلائے گا اور فوری طور پر پورے صوبے میں نافذ العمل ہو گا ۔ اس قانون کے تحت ایسے ساوٴنڈ سسٹم کا استعمال غیر قانونی ہو گا ، جس سے غیر معمولی آواز پیدا ہو اور اس سے لوگ تکلیف یا پریشانی محسوس کریں یا ان کی صحت اور آرام متاثر ہو یا جس سے امن عامہ میں خلل پڑے ۔

ایسے ساوٴنڈ سسٹم کے استعمال میں معاونت یا اس کی اجازت دینا بھی قانوناً جرم ہو گا ۔ عوامی مقامات ، عبادات کے دوران عبادت گاہوں ، اسپتالوں ، تعلیمی اداروں ، گھروں اور دیگر سرکاری اور نجی مقامات پر ساوٴنڈ سسٹم کا استعمال ممنوع ہو گا ۔ اس کے لیے پہلے سے اجازت لینا ہو گی ۔ مساجد میں اذان ، جمعہ یا عید کے دن عربی خطبہ ، کسی فرد کی موت یا گمشدگی کے اعلان یا کسی چیز یا فرد کے مل جانے کے اعلان کے لیے ایک ایکسٹرنل ساوٴنڈ سسٹم کے استعمال کی اجازت ہو گی ۔

حکومت یا اس کے مجاز افسر کی اجازت سے کسی عوامی مقامات پر مناسب وقت کے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

10/04/2015 - 20:39:31 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان