عدالتوں اور ججز صاحبان سے استدعا ہے کہ وہ حکومت کے کاموں میں حکم امتناعی دینے سے ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل اپریل

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 07/04/2015 - 22:39:09 وقت اشاعت: 07/04/2015 - 22:39:09 وقت اشاعت: 07/04/2015 - 22:39:09 وقت اشاعت: 07/04/2015 - 22:35:30 وقت اشاعت: 07/04/2015 - 22:35:30 وقت اشاعت: 07/04/2015 - 22:29:16 وقت اشاعت: 07/04/2015 - 22:29:16 وقت اشاعت: 07/04/2015 - 22:29:16 وقت اشاعت: 07/04/2015 - 22:28:02 وقت اشاعت: 07/04/2015 - 22:28:02 وقت اشاعت: 07/04/2015 - 22:28:02
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

عدالتوں اور ججز صاحبان سے استدعا ہے کہ وہ حکومت کے کاموں میں حکم امتناعی دینے سے گریز کریں،شرجیل انعام میمن

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔07 اپریل۔2015ء)وزیر اطلاعات و بلدیات سندھ شرجیل انعام میمن نے عدالتوں اور ججز صاحبان سے استدعا کی ہے کہ وہ حکومت کے کاموں میں حکم امتناعی دینے سے گریز کریں۔ سپریم کورٹ کے فلاہی اور رفاہی پلاٹس، کھیلوں کے میدان، گرین بیلٹس اور پارکس پر کسی بھی قسم کی تجاوزات نہ ہونے اور ان زمینوں کا قانونی حیثیت کو کوئی بھی تبدیل نہیں کرسکتا کہ واضح فیصلے کے بعد ماتحت عدالتوں کے اس کے برخلاف حکم امتناعی قابل افسوس ہیں۔

ماضی میں تعلیمی اداروں، اسپتالو ں اور دیگر رفاہی کاموں کے ناموں پر سرکار سے زمینیں لینے والوں کے اب اسے کاروبار کا ذریعہ بنایا ہوا ہے، جسے کسی صورت نہیں ہونے دیا جائے گا۔ صوبے بھر میں سرکاری زمینوں اور املاک کا ناجائز اور غیر قانونی استعمال روکنے کی مہم کو اس وقت تک نہیں روکا جائے گا، جب تک ایک ایک انچ زمین حقیقی طور پر جس استعمال کے لئے لی گئی ہے اس پر اس کا استعمال شروع نہ کردیا جائے۔

وہ منگل کے روز ضلع ایسٹ میں گلشن چورنگی پر قائم ”پی اے ایس ایس پی“ نامی غیر قانونی شادی ہال کو مسمار اور بعد ازاں سرسید یونیورسٹی کے تحت علیگھ یونیورسٹی کے ساتھ قائم دو غیر قانونی شادی ہالز کو سیل کئے جانے کے بعد میڈیا سے بات چیت کررہے تھے، اس موقع پرارکان سندھ اسمبلی امداد پتافی، ڈاکٹر سکندر شورو، ایڈمنسٹریٹر کراچی ثاقب سومرو، میٹروپولیٹن کمشنر کراچی مسعودعالم، ایڈمنسٹریٹر ایسٹ سید صلاح الدین، ڈی سی ایسٹ اور دیگر اعلیٰ افسران بھی ان کے ہمراہ موجود تھے۔

اس موقع پر انہوں نے گلشن چورنگی پر ہی قائم النساء ہال کی انتظامیہ کو بھی تنبہہ کی کہ وہاں خواتین کے نام پر لی گئی زمین پر اگر اب کوئی شادی بیاہ کی تقریب یا دیگر کوئی کمرشل پروگرام کا انعقاد کیا گیا تو اس ہال کو بھی سیل کردیا جائے گا۔ میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے شرجیل انعام میمن نے کہا کہ ہم نے تجاوزات کے خلاف مہم کا صوبے بھر میں جو آغازکیا ہے اس کو اپنے منطقی انجام تک پہنچا کر ہی دم لیا جائے گا۔

انہوں نے کہاکہ مجھے افسوس ہے کہ گذشتہ روز ہم نے ڈسٹرکٹ سینٹرل میں سڑک کے درمیان میں موجود گرین بیلٹ پر قائم دو غیر ملکی ریسٹورینٹ پیزا ہٹ اور برگر کنگ اور ایک مٹھائی کی دکان دلپسند سوئیٹ کو سیل کیا تھا ، جس پر ہائی کورٹ کی جانب سے اس ڈسٹرکٹ کے ایڈمنسٹریٹر کے خلاف توہین عدالت کا نوٹس دیا گیا اور ناظر کی مدد سے اس سیل کو بھی کھلوا دیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ میں میڈیا کے توسط سے معزز عدلیہ اور جج صاحبان سے استدعا کرتا ہوں کہ وہ سپریم کورٹ کے واضح احکامات کے بعد حکومتی معاملات میں حکم امتناعی

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

07/04/2015 - 22:29:16 :وقت اشاعت