سندھ اسمبلی اجلاس میں دو قرار دادیں اتفاق رائے سے منظور کر لی گئیں
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل اپریل

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 07/04/2015 - 22:28:02 وقت اشاعت: 07/04/2015 - 22:28:02 وقت اشاعت: 07/04/2015 - 22:26:29 وقت اشاعت: 07/04/2015 - 22:26:29 وقت اشاعت: 07/04/2015 - 22:25:14 وقت اشاعت: 07/04/2015 - 22:24:13 وقت اشاعت: 07/04/2015 - 22:24:13 وقت اشاعت: 07/04/2015 - 22:22:58 وقت اشاعت: 07/04/2015 - 22:22:58 وقت اشاعت: 07/04/2015 - 22:22:58 وقت اشاعت: 07/04/2015 - 22:15:48
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

سندھ اسمبلی اجلاس میں دو قرار دادیں اتفاق رائے سے منظور کر لی گئیں

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔07 اپریل۔2015ء)سندھ اسمبلی نے منگل کو دو قرار دادیں اتفاق رائے سے منظور کر لیں ، جن میں مطالبہ کیا گیا کہ اقلیتوں کی عبادت گاہوں سے متعلق تعمیراتی اسکیموں کے لیے فنڈز مختص کیے جائیں اور ان عبادت گاہوں کے تحفظ کے لیے وزیر اعلیٰ سندھ کے اعلان مطابق اقلیتوں سے تعلق رکھنے والے 2000 پولیس کانسٹیبلز بھرتی کیے جائیں ۔

پہلی قرار داد متحدہ قومی موومنٹ ( ایم کیو ایم ) کے اقلیتی رکن دیوان چند چاولہ نے پیش کی تھی ، جس میں مطالبہ کیا گیا کہ صوبے میں اقلیتوں کی عبادت گاہوں کی تعمیراتی اسکیموں کے لیے فنڈز مختص کیے جائیں ۔ دیوان چند چاولہ نے کہاکہ 1947 ء سے 2015ء تک اقلیتوں کی عبادت گاہوں کو بہت نقصان پہنچا ہے ۔ ہم اس دھرتی کے قدیم باشندے ہیں ۔ ہم لوگوں کو دینے والے تھے ۔



مکمل خبر پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

07/04/2015 - 22:24:13 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان