والفقار علی بھٹو کی 36ویں برسی (کل) منائی جائیگی
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ اپریل

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 03/04/2015 - 20:56:23 وقت اشاعت: 03/04/2015 - 20:54:59 وقت اشاعت: 03/04/2015 - 20:54:59 وقت اشاعت: 03/04/2015 - 20:51:21 وقت اشاعت: 03/04/2015 - 20:39:15 وقت اشاعت: 03/04/2015 - 20:39:15 وقت اشاعت: 03/04/2015 - 20:38:04 وقت اشاعت: 03/04/2015 - 20:38:04 وقت اشاعت: 03/04/2015 - 20:38:04 وقت اشاعت: 03/04/2015 - 20:31:00 وقت اشاعت: 03/04/2015 - 20:31:00
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

والفقار علی بھٹو کی 36ویں برسی (کل) منائی جائیگی

بھٹو کے دور میں پاکستان کی خارجہ پالیسی جن خطوط پر استوار ہوئی ، ماہرانہ انداز سے ذوالفقار علی بھٹو اسے آگے بڑھاتے رہے وہ مغربی طاقتیں بالخصوص امریکہ کے لئے درد سر تھا، ذوالفقار علی بھٹو زندگی کے مختلف پہلوؤں کا جائزہ

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔03 اپریل۔2015ء )پیپلزپارٹی کے بانی اور سابق وزیراعظم ذوالفقار علی بھٹو کی 36ویں برسی (آج )ہفتہ کومنائی جارہی ہے اس موقع پرجلسوں اور مختلف تقاریب کا اہتمام کیاجائیگا۔ ذوالفقار علی بھٹو کو 1957 ءء میں 29سال کی عمر میں پہلی بار اقوام متحدہ میں پاکستانی وفد کے سب سے کم عمر رُکن ہونے کا اعزاز ملا۔ بھٹوکو وزارت خارجہ کا قلم دان سپرد کیا گیا تویہ پاکستان کی آزاد خارجہ پالیسی کانکتہ آغاز بنا۔

بھٹو کے دور میں پاکستان کی خارجہ پالیسی جن خطوط پر استوار ہوئی اور جس ماہرانہ انداز سے ذوالفقار علی بھٹو اسے آگے بڑھاتے رہے وہ مغربی طاقتیں بالخصوص امریکہ کے لئے درد سر تھا۔ 6/ستمبر1965 ءء پاک بھارت جنگ ذوالفقار علی بھٹو نے بین لاقوامی محاذ پرلڑی اور انڈونیشیا ، سعودی عرب، ایران، ترکی ، عراق، مصر، اردن، الجزائر شام ، سوڈان، یمن، مراکش ، کینیا اور کویت کی حکومتوں کو پاکستان کی اخلاقی اور مالی امداد پر رضامند کیا، اُنہوں نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں پاکستان کا مقدمہ لڑتے ہوئے تاریخی تقریر کی جس کے ایک ایک لفظ سے زندگی کی حرارت اور جذبوں کی سچائی عیاں تھی۔

16/جون1966 ءء کو ذوالفقار علی بھٹو نے جنرل ایوب خان کی پالیسیوں سے اختلاف کرتے ہوئے وزارت سے استعفیٰ دے دیا۔ 30/نومبر1967 ءء کو پاکستان پیپلز پارٹی کی بنیاد رکھ کر پاکستان میں عوامی جدوجہد کاآغاز کیا۔ ذوالفقار علی بھٹو نے خود ایک انٹرویو میں اس بات کااظہار کرتے ہوئے کہا کہ میری والدہ نے مجھے غریبوں اور مفلسوں سے آگاہی دی اس کے علاوہ جب میں والد صاحب کے ساتھ دورے پر جاتا تو غریبوں کی حالت دیکھ کر آبدیدہ ہوجاتا، بمبئی اور سندھ کے اندرونی حصوں کی معاشی حالت میں غیر معمولی فرق تھا اسی فرق افلاس نے نقوش میرے ذہن پر اور بھی گہرے کردیئے۔

ذوالفقار علی بھٹو کے روپ میں پہلا ایسا سیاسی لیڈر اُبھر کرسامنے آیا جس نے سیاست کو جاگیرداروں اور سرمایہ داروں کے ڈرائنگ روموں سے نکال کر عوام کی دہلیز تک پہنچایا ایک عوامی سیاسی پارٹی بنانے کے لئے ملک کے طول وعرض کے دورے کئے عوام کے ساتھ زمین پر جاکر بیٹھا براہ راست عوام سے رابطے کی ناقابل فراموش تاریخ رقم کی۔ مزدوروں ،کسانوں ، اقلیتوں ،عورتوں اور تمام کچلے ہوئے طبقات کوسراُٹھاکر جینے اور اپنے حقوق حاصل کرنے کا شعور بخشا۔

پیپلز پارٹی کا بنیادی منشور ایسا بنایا اور ایسے نعرے دیئے جو غریب عوام کے حقوق کے آئینہ دار تھے۔ عالمی سامراج کے تہہ دار استحصال کے چنگل اور جاگیرداروں ، سرمایہ داروں ، فوجی و سول بیوروکریسی کی گرفت سے ریاست اور عوام کو آزاد کرنے کی تحریک بخشی۔ برصغیر کی تاریخ میں پہلی مرتبہ شہید بھٹو نے ایسامنشور پیش کیا جو ملک وعوام کو معاشی وسماجی غلامی اور طبقاتی نظام سے نجات دلانے کا نقیب بن گیا ۔

غریب عوام سے رابطے کے جدید اور نت نئے طریقے اپنائے۔ پسماندہ علاقون میں جاکر عوام سے مکالمہ کیا۔ جلسے ،کارنرمیگنز اور کھلی کچہریوں کا نیٹ ورک قائم کیا۔ سرمایہ داروں ، ساہوکاروں اور چند خاندانوں کے کنٹرول میں رہنے والے صنعتی اور دیگراداروں کو نیشنلائز کرکے عوام کے لئے روزگار کے دورازے کھولے۔ اس وقت کوئی غریب آدمی پاسپورٹ بنانے اور بیرون ملک جانے کاتصور نہیں کرسکتا تھا بھٹو شہید نے دیہاتوں اور چھوٹے شہروں کے لاکھوں افراد کو مشرق وسطی اور دیگر خطوں کے ممالک میں روزگار فراہم کیا۔

غریب عوام کی قسمت تبدیل کردی۔ ہرادارے میں محنت کشوں کی تنظیم سازی کے حق کو بحال کیا۔ مزدوروں کے عالمی دن یوم مئی کو عام تعطیل اور قومی سطح پر متعارف کروایا۔ اپنی ذاتی لاکھوں ایکڑزمین غریب ہاریوں میں تقسیم کی۔ عوام کو طاقت کا سرچشمہ ہونے کا احساس عملی طور پر دلایا۔ جس طرح سوشلزم کے خوف سے سرمایہ دارانہ ممالک محنت کشوں کو مراعات دینے پر مجبور ہوئے اسی طرح پاکستان کے جاگیردار ،سرمایہ دار، ملٹری وسول بیوروکریسی عوام کی طرف دیکھنے پر مجبور ہوئے ۔

بھٹو شہید کے اسلامی سوشلزم کے نعرے نے عوام دشمن قوتوں کی نیندیں حرام کردیں۔ بھٹو شہید کے عوامی کردار نے ربع صدی سے اسٹیبلشمنٹ کا ظالمانہ نظام میں جکڑے ہوئے عوام کو کھڑ اکردیا اور عالمی سامراج کے انسان دشمن ایجنڈے کو بھی بے نقاب کردیا۔ ناصرف پاکستان کے مظلوم طبقات کوزندہ رہنے اور

مکمل خبر پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

03/04/2015 - 20:39:15 :وقت اشاعت