پپری میں سماجی برائیاں بڑھ گئیں ، عوامی احتجاج کے باعث بند کئے گئے جوا کے اڈے پھرکھل ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات اپریل

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 02/04/2015 - 23:52:06 وقت اشاعت: 02/04/2015 - 23:27:26 وقت اشاعت: 02/04/2015 - 23:16:44 وقت اشاعت: 02/04/2015 - 23:15:38 وقت اشاعت: 02/04/2015 - 23:15:07 وقت اشاعت: 02/04/2015 - 23:15:07 وقت اشاعت: 02/04/2015 - 23:15:07 وقت اشاعت: 02/04/2015 - 23:00:12 وقت اشاعت: 02/04/2015 - 23:00:12 وقت اشاعت: 02/04/2015 - 22:57:51 وقت اشاعت: 02/04/2015 - 22:57:51
- مزید خبریں

کراچی

پپری میں سماجی برائیاں بڑھ گئیں ، عوامی احتجاج کے باعث بند کئے گئے جوا کے اڈے پھرکھل گئے

کرا چی(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔02 اپریل۔2015ء) پپری میں سماجی برائیاں بڑھ گئیں ، عوامی احتجاج کے باعث بند کئے گئے جوا کے اڈے پھرکھل گئے ،قریبی فیکٹریوں میں دہاڑی پر مزدوری کرنے والے محنت کش اپنی کمائی لٹانے لگے ۔ قومی عوامی تحریک نے جوا کے اڈوں سمیت تمام سماجی برائیوں کے خلاف تحریک چلانے کا اعلان کردیا ۔ حیرت ہے کہ حکومتی پارٹی ، پولیس سمیت قانون نافذ کرنے والے اداروں کو شکایات کے باوجود جوا کے اڈے سر عام چل رہے ہیں: رہنما۔

میں نے پپری کا پورا علاقہ گھوم کر دیکھا ہے کہیں کوئی بھی جوا کا اڈہ نہیں چل رہا، سیاسی و سماجی رہنما جھوٹ بولتے ہیں : ایس ایچ او بن قاسم ۔۔۔ تفصیلات کے مطابق ملیر میں بن قاسم کے علاقہ پپری پچاس ہزار سے زائد آبادی پر مشتمل ہے جس میں اکثریت محنت کش لوگوں کی ہے جو قریبی سینکڑون فیکٹریوں میں دہاڑی کما کر جب شام گئے اپنے گھروں کو لوٹتے ہیں تو پپری میں سر عام چلنے والے جوا کے اڈوں پر اپنی کمائی کو دگنا کرنے کی لالچ میں پورے دن کی مزدوری لٹا بیٹھتے ہیں ، اس سلسلے میں علاقے کے مختلف سیاسی و سماجی تنظیموں نے کچھ عرصہ قبل آل پارٹیز کانفرنس منعقد کرکے آئی جی پولیس سندہ سمیت تمام اعلی حکام کو ثبوتوں سے تحریری شکایات کی تھیں اور احتجاج کیا تھا جس کے بعد عارضی طور پر جوا کے اڈے بند کردیئے گئے تھے لیکن نئے ایس ایچ

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

02/04/2015 - 23:15:07 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان