ایل این جی کی درآمد کے فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کریں گے، مہنگی گیس عوام کو ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ مارچ

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 27/03/2015 - 20:26:09 وقت اشاعت: 27/03/2015 - 20:26:09 وقت اشاعت: 27/03/2015 - 20:22:52 وقت اشاعت: 27/03/2015 - 20:22:52 وقت اشاعت: 27/03/2015 - 20:14:14 وقت اشاعت: 27/03/2015 - 20:10:27 وقت اشاعت: 27/03/2015 - 20:10:27 وقت اشاعت: 27/03/2015 - 20:10:27 وقت اشاعت: 27/03/2015 - 20:04:58 وقت اشاعت: 27/03/2015 - 20:04:58 وقت اشاعت: 27/03/2015 - 20:04:58
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

ایل این جی کی درآمد کے فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کریں گے، مہنگی گیس عوام کو فروخت نہیں کرنے دیں گے، ایل این جی منصوبے پر ہمیں اعتماد میں نہیں لیا گیا، مسئلے کو مشترکہ مفادات کونسل میں اٹھایا گیا لیکن اس کا کوئی جواب نہیں ملا،وزیراعلیٰ سندھ قائم علی شاہ کا پریس کانفرنس سے خطاب

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔27 مارچ۔2015ء) وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت کے ایل این جی درآمد کرنے کے فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کریں گے۔ مہنگی گیس عوام کو فروخت نہیں کرنے دیں گے۔ ایل این جی درآمد کرنے کے فیصلے پر70 فیصد گیس پیدا کرنے والے صوبہ سندھ کو اعتماد میں نہیں لیا گیا۔ اس فیصلے پر سندھ حکومت سے کوئی مشاورت بھی نہیں کی گئی۔

وزیراعلیٰ ہاوس میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے سید قائم علی شاہ نے کہاکہ ایل این جی کی تقسیم اور اس کی قیمتوں کے تعین کا بھی کوئی فارمولا طے نہیں کیا گیا۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ وفاقی حکومت مہنگے داموں خریدے جانے والی ایل این جی سندھ کو فروخت کرے گی لیکن وہ ایسا نہیں ہونے دیں گے۔ ایل این جی کی خریدو فروخت کے مسئلے کو مشترکہ مفادات کونسل میں اٹھایا گیا لیکن اس کا کوئی جواب نہیں ملا۔ اس موقع پر صوبائی وزیر مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ ایل این جی اور مقامی گیس کو مکس کر کے فروخت کرنے کا منصوبہ بنایا گیا ہے جس سے ہماری گیس ہمیں ہی مہنگے ملے گی۔ وفاقی حکومت کی اس ناانصافی پر سپریم کورٹ سے رجوع کریں گے۔

27/03/2015 - 20:10:27 :وقت اشاعت