نئی مانیٹری پالیسی کا اعلان، شرح سود 13 سال کی کم ترین سطح پر آگئی،ملک میں غذائی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
ہفتہ مارچ

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 21/03/2015 - 21:09:52 وقت اشاعت: 21/03/2015 - 21:09:52 وقت اشاعت: 21/03/2015 - 21:09:52 وقت اشاعت: 21/03/2015 - 21:09:32 وقت اشاعت: 21/03/2015 - 21:09:32 وقت اشاعت: 21/03/2015 - 21:07:21 وقت اشاعت: 21/03/2015 - 21:07:21 وقت اشاعت: 21/03/2015 - 21:05:14 وقت اشاعت: 21/03/2015 - 21:05:14 وقت اشاعت: 21/03/2015 - 21:05:14 وقت اشاعت: 21/03/2015 - 21:00:34
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

نئی مانیٹری پالیسی کا اعلان، شرح سود 13 سال کی کم ترین سطح پر آگئی،ملک میں غذائی ،غیر غذائی اشیاء میں مہنگائی کم ہورہی ہے، اسٹیٹ بینک ،

رواں مالی سال کے دوران معاشی اظہاریوں کی زیادہ تعداد اور بہتری کی سمت بڑھی ہے، , مارچ 2015ء کے آئی بی اے ایس بی پی سروے پر مبنی اشاریوں کے مطابق صارفین کے اعتماد اور موجودہ معاشی حالات میں بہتری ظاہر ہوئی ہے

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔21مارچ۔2015ء)اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے آئندہ 2 ماہ کے لئے مانیٹری پالیسی کا اعلان کرتے ہوئے شرح سود میں 0.5 فیصد کمی کردی ہے۔اس کمی کے بعدشرح سود8فیصد پر آگئی ہے ،جو13سال کی کم ترین سطح ہے۔ رواں مالی سال کے دوران معاشی اظہاریوں کی زیادہ تعداد اور بہتری کی سمت بڑھی ہے۔ عمومی گرانی بالحاظ صارف اشاریہ قیمت مسلسل نیچے کی طرف جارہی ہے اور توقع ہے کہ 8.0 فیصد کے سالانہ ہدف سے کافی نیچے ہوگی۔

مالی سال 15ء کے لئے اوسط گرانی بلحاظ صارف اشاریہ قیمت کے بارے میں اسٹیٹ بینک کی تازہ ترین پیش گوئی 4 سے 5 فیصد ہے۔ ساتھ ہی حقیقی جی ڈی پی نمو مالی سال 2014ء کی کارکردگی سے تجاوز کرنے کی راہ پر گامزن ہے۔ حال ہی میں زرمبادلہ کی رقوم کی آمد اور تیل کی کم قیمتوں کی بنا پر پیرونی شعبے کا منظر نامہ بہتر ہوتا جارہا ہے۔ مالی سال 2015ء کی پہلی ششماہی کے دوران حکومت کی مالیاتی خسارے پر قابو پانے کی کوشش بھی درست راستے پر ہیں، گو کہ محاصل کی وصولی کی نمو کچھ سست ہے۔

مارچ 2015ء کے آئی بی اے ایس بی پی سروے پر مبنی اشاریوں کے مطابق صارفین کے اعتماد اور موجودہ معاشی حالات میں بہتری ظاہر ہوتی ہے۔ موجودہ معاشی استحکام اصلاحات کا عمل تیز کرنے کا ایک موقع فراہم کرتا ہے تاکہ معیشت میں آنے والی بہتری کو پائیدار بنایا جاسکے۔ حالیہ رجحان کے مطابق گرانی میں اعتدال وسیع البنیاد ہے اور غذائی وغیر غذائی گرانی کم ہورہی ہے۔

قوزی گرانی کے دونوں پیمانوں، غیر غذائی غیر توانائی اور تراشیدہ اوسط میں بھی کمی آرہی ہے تاہم گرانی میں بلعموم اور اجناس کی قیمتوں میں بالخصوص موجودہ کمی کی وجہ سے مجموعی طلب میں اضافہ ہوسکتا ہے جس کے مالی سال 2015ء سے آگے گرانی کے حوالے سے مضمرات ہوسکتے ہیں۔ بڑے پیمانے پر اشیاسازی کو جولائی تا جون مالی سال 2015ء میں

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

21/03/2015 - 21:07:21 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان