صوبائی وزیر جنگلات و جنگلی حیات ‘ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و اقلیتی امور گیان چند ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل مارچ

مزید مقامی خبریں

وقت اشاعت: 10/03/2015 - 21:57:06 وقت اشاعت: 10/03/2015 - 21:45:22 وقت اشاعت: 10/03/2015 - 21:45:22 وقت اشاعت: 10/03/2015 - 21:43:32 وقت اشاعت: 10/03/2015 - 21:43:32 وقت اشاعت: 10/03/2015 - 21:43:32 وقت اشاعت: 10/03/2015 - 21:37:33 وقت اشاعت: 10/03/2015 - 21:30:26 وقت اشاعت: 10/03/2015 - 21:12:18 وقت اشاعت: 10/03/2015 - 20:55:58 وقت اشاعت: 10/03/2015 - 20:55:58
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

صوبائی وزیر جنگلات و جنگلی حیات ‘ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و اقلیتی امور گیان چند اسرانی نے ننگرپارکر میں نایاب نسل کے جانوروں کے شکار کی خبروں کا سخت نوٹس لیا

کراچی(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار .10 مارچ 2015ء ) صوبائی وزیر جنگلات و جنگلی حیات ‘ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و اقلیتی امور گیان چند اسرانی نے ننگرپارکر میں نایاب نسل کے جانوروں کے شکار کی خبروں کا سخت نوٹس لیا ہے ۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ اخبارات میں شائع خبروں کے حوالہ سے محکمہ وائلڈ لائف کی کارکردگی متاثر ہورہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ ننگرپارکر میں نایاب نسل کے ہرن اور روجھن قدرت کا بہترین تحفہ ہیں ان کے شکار کے لئے جانے والے شکاریوں کو گرفتار کرکے وائلڈ لائف ایکٹ کے تحت قانونی کارروائی کی جائے ۔

انہوں نے کنزرویٹر وائلڈ لائف جاوید احمد مہر کو ہدایات دیں کہ اگر اب اخبارات میں وائلڈ لائف محکمہ کی غفلت کے بارے میں کوئی خبر شائع ہوئی تو متعلقہ گیم وارڈن اور اس کے عملہ کو معطل کرکے تادیبی کارروائی کی جائے گی ۔ انہوں نے کہا کہ جانوروں کی نسل کو معدوم ہونے کے خطرہ سے بچانا ہمارا قومی فریضہ ہے اس حوالہ سے متعلقہ این جی اوز بھی اپنا کردار ادا کریں اور حکومتی اہلکاروں کے ساتھ مل کر شکاریوں کی نشاندہی کریں اس طرح ہم سندھ میں وائلڈ لائف سسٹم کو بچانے میں اپنا اپنا حصہ بہتر طور پر ادا کر سکتے ہیں ۔

10/03/2015 - 21:43:32 :وقت اشاعت