نینوٹیکنالوجی ایکسویں صدی کی انقلاب آفریں تحقیق ہے ،ڈاکٹر ارشاد حسین /ڈاکٹر اظہر ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر مارچ

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 09/03/2015 - 23:07:51 وقت اشاعت: 09/03/2015 - 23:05:40 وقت اشاعت: 09/03/2015 - 23:05:40 وقت اشاعت: 09/03/2015 - 23:03:49 وقت اشاعت: 09/03/2015 - 22:59:53 وقت اشاعت: 09/03/2015 - 22:59:53 وقت اشاعت: 09/03/2015 - 22:46:04 وقت اشاعت: 09/03/2015 - 22:46:04 وقت اشاعت: 09/03/2015 - 22:46:04 وقت اشاعت: 09/03/2015 - 22:43:29 وقت اشاعت: 09/03/2015 - 22:43:29
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

نینوٹیکنالوجی ایکسویں صدی کی انقلاب آفریں تحقیق ہے ،ڈاکٹر ارشاد حسین /ڈاکٹر اظہر علی،

صنعت ،زراعت ،ٹیکسٹائل ،طب اور دوسرے شعبہ جات میں ترقی کی نئی راہیں استوار کر دیگی، نینوٹیکنالوجی کی وجہ سے ہر ٹیکنالوجی بدل سکتی ہے،اس کا مستقبل بہت روشن اور تابناک تصورکیا جارہاہے،سیمینار سے خطاب

کراچی (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار . 9 مارچ 2015ء) نینوٹیکنالوجی ایکسویں صدی کی انقلاب آفریں تحقیق ہے جو صنعت ،زراعت ،ٹیکسٹائل ،طب اور دوسرے شعبہ جات میں ترقی کی نئی راہیں استوارکردے گی ۔نینوٹیکنالوجی کی وجہ سے ہر ٹیکنالوجی بدل سکتی ہے۔اس کا مستقبل بہت روشن اور تابناک تصورکیا جارہاہے۔لیکن اس کے ساتھ ساتھ بعض سائنسدان یہ سوال بار بارٹھاتے ہیں کہ اس تکنیک سے نئی پیداوار کس قدر محفوظ اور بے ضرررہے گی۔

اس تشکیک پر اگر نئی ریسرچ نے موثر کردار اداکیا تو جو خطرات تحفظات ماحول،صحت ،جانداروں کو درپیش ہوسکتے ہیں وہ اثرات زائل ہوئے یا معدوم ہوگئے،تو یہ ایک بہت ہی عدیم المثال ایجاد ہوگی۔چند ماہرین کہتے ہیں کہ اس سے مستقبل میں کئی سال تک چلنے والی ”بیٹریاں “ تیار ہوسکتی ہیں۔مالیکولر ،الیکٹرونکس بہت چھوٹے چھوٹے کمپیوٹر، سرکیٹس اور سنسر تخلیق کئے جاسکیں گئے۔

سائنسدانوں نے ایسی مائیکرواسکوپس تیارکرلیں ہیں جس کی مدد سے ایٹموں کو ایک دوسرے سے جداکیا جاسکتا ہے۔اس کے علاوہ کم قیمت اشیاء کی مینوفکچرنگ ہوسکے گی ،چھوٹے حوبصورت مکانات اور

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

09/03/2015 - 22:59:53 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان