سندھ ہائیر ایجوکیشن کمیشن کے مالی معاملات اور ادارے کی ایکریڈی ٹیشن کیلئے قوانین ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ مارچ

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 04/03/2015 - 20:33:45 وقت اشاعت: 04/03/2015 - 20:33:45 وقت اشاعت: 04/03/2015 - 20:33:45 وقت اشاعت: 04/03/2015 - 20:32:53 وقت اشاعت: 04/03/2015 - 20:32:53 وقت اشاعت: 04/03/2015 - 20:32:53 وقت اشاعت: 04/03/2015 - 20:31:44 وقت اشاعت: 04/03/2015 - 20:31:44 وقت اشاعت: 04/03/2015 - 20:31:44 وقت اشاعت: 04/03/2015 - 20:30:55 وقت اشاعت: 04/03/2015 - 20:30:55
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

سندھ ہائیر ایجوکیشن کمیشن کے مالی معاملات اور ادارے کی ایکریڈی ٹیشن کیلئے قوانین کو ہفتے کے اندرحتمی شکل دی جائیگی،سید قائم علی شاہ،

ایک ہفتے کے اندر منظوری کیلئے ہائیر ایجوکیشن کمیشن کے مجوزہ قوانین کاجلد از جلد مطالعہ کیا جائے،وزیر اعلیٰ سندھ کی متعلقہ افسران کو ہدایات

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔4مارچ۔2015ء)وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ نے کہا ہے کہ سندھ ہائیر ایجوکیشن کمیشن کے مالی معاملات،عملے کی تقرری اورادارے کی ایکریڈیٹیشن کیلئے قوانین 2014کو ایک ہفتے کے اندرحتمی شکل دی جائے گی تاکہ سندھ ہائیر ایجوکیشن کمیشن کے مالی معاملات اور دیگر امور خوش اصلوبی سے چلائے جا سکے۔انہوں نے متعلقہ افسران کو ہدایات دیں کہ وہ اجلاس میں پیش کئے گئے ہائیر ایجوکیشن کمیشن کے مجوزہ قوانین کاجلد از جلد مطالعہ کریں تاکہ ان قوانین کو ایک ہفتے کے اندر منظور کیا جا سکے۔

یہ احکامات انہوں نے بدھ کووزیراعلیٰ ہاؤس میں سندھ ہائیر ایجوکیشن کمیشن کے پہلے اجلاس کی صدارت کے دوران دیئے۔ اجلاس میں سندھ ہائیر ایجوکیشن کمیشن14اراکین جس میں چیئرمین ڈاکٹر عاصم حسین ،جسٹس(ر) دیدار حسین شاہ،آنجہانی جسٹس(ر) رانا بھگوانداس،پروفیسر ڈاکٹر پروین شاہ،نادرا پنجوانی،حنیدلاکانی اور سید غلام نبی شاہ(نامزدارکان ہیں)جبکہ صوبائی سیکرٹری ایجوکیشن،صوبائی سیکرٹری خزانہ،صوبائی سیکرٹری منصوبابندی و ترقیات،سیکرٹری انفارمیشن ٹیکنالاجی،چیئرمین چارٹر انسپیکشن اینڈ ایویلیشن کمیٹی،ڈائریکٹر جنرل کالجز سندھ،سیکرٹری سندھ ہائیرایجوکیشن کمیشن ایکس آفیشو ممبر ہیں،رانا بھگوان داس کے علاوہ اجلاس میں شرکت کی۔

اجلاس میں سندھ ہائیر ایجوکیشن کمیشن کے رکن آننجہانی جسٹس(ر) رانا بھگوانداس کی وفات پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے ان کو خراج تحسین پیش کرنے کیلئے 2منٹ خاموشی اختیار کی گئی اور انکی بحیثیت جج، چیئرمین فیڈرل پبلک سروس کمیشن اور رکن ہائیرایجوکیشن کمیشن خدمات کو زبردست خراج تحسین پیش کیا گیا۔اجلاس میں تفصیلی غور و خوص اور بحث مباحثے کے بعد کمیشن نے تعلیم کو صوبوں کومکمل طور منتقل کرنے پر عمل درآمد یقینی بنانے اورہائیرایجوکیشن کمیشن کے تمام اختیارات اور اثاثے صوبوں کو منتقل

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

04/03/2015 - 20:32:53 :وقت اشاعت