کراچی اسٹاک مارکیٹ میں بدستور مندی کے بادل چھائے رہے،
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل مارچ

مزید تجارتی خبریں

وقت اشاعت: 03/03/2015 - 23:26:35 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 23:18:29 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 23:18:29 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 22:17:05 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 22:11:30 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 22:07:14 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 21:35:14 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 21:35:14 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 21:01:12 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 20:01:57 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 20:01:57
- مزید خبریں

کراچی

کراچی اسٹاک مارکیٹ میں بدستور مندی کے بادل چھائے رہے،

کے ایس ای 100 انڈیکس 33200 پوائنٹس کی نفسیاتی حد سے گر گیا، 33100 پوائنٹس کی سطح پر بندہوا ، مارکیٹ میں سرمایہ کاروں کے مزید 23 ارب سے زائد روپے ڈوب گئے

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔03مارچ۔2015ء) کراچی اسٹاک مارکیٹ میں منگل کے روز بھی مندی کے بادل چھائے رہے، کے ایس ای 100 انڈیکس 33200 پوائنٹس کی نفسیاتی حد سے گر گیا اور 33100 پوائنٹس کی سطح پر بندہوا جبکہ مارکیٹ میں سرمایہ کاروں کے مزید 23 ارب سے زائد روپے ڈوب گئے اس طرح صرف 2 دنوں میں سرمائے کے مجموعی حجم میں 1 کھرب 18 ارب سے زائد روپے کی کمی واقع ہوچکی ہے۔

پیر کے روز اسٹاک مارکیٹ شدید ترین مندی سے دوچار ہونے کے بعد منگل کے دن بھی اچھی کارکردگی کامظاہرہ نہیں کرسکی،ٹریڈنگ کے دوران کم قیمت حصص کی خریداری کے باعث انڈیکس 33300 پوائنٹس کی سطح کے قریب تو جاپہنچا لیکن سرمائے کے انخلاء کے باعث مارکیٹ اس لیول پر برقرار نہ رہ سکی اور تنزلی کاشکار ہوگئی جس کے بعدمندی کا یہ رجحان کاروبار کے اختتام تک غالب رہا۔

تجزیہ کاروں کے مطابق مارکیٹ تکینکی گرواٹ کے عمل سے گذر رہی ہے اور ٹریڈنگ کے دوران انڈیکس کا32812پوائنٹس کی کم ترین سطح تک گر جانا اس بات کی جانب اشارہ ہے کہ آئندہ دنوں میں مارکیٹ میں مندی کا رجحان برقرا ر رہ سکتا ہے۔عالمی مارکیٹ میں کموڈیٹیز کی گراوٹ سے غیر ملکی سرمایہ کاری بھی گھٹ رہی ہے جس سے مقامی سرمایہ کار بھی تذبذب کا شکار ہے اور وہ کئی نئی پوزیشن لینے سے گریز کر رہے ہیں ۔

منگل کو کاروبار کے اختتام پر کے ایس ای 100 انڈیکس میں 24.81 پوائنٹس کی کمی واقع ہوئی اورکے ایس ای 100 انڈیکس 33213.58 پوائنٹس

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

03/03/2015 - 23:26:35 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان