سندھ اسمبلی: ٹاوٴن میونسپل ایڈمنسٹریشنز کے فنڈزکے حوالے سے اپوزیشن لیڈر شہریار ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل مارچ

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 03/03/2015 - 22:34:52 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 22:24:06 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 22:20:52 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 22:20:52 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 22:20:52 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 22:18:54 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 22:18:54 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 22:17:05 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 22:12:50 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 22:11:30 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 22:07:14
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

سندھ اسمبلی: ٹاوٴن میونسپل ایڈمنسٹریشنز کے فنڈزکے حوالے سے اپوزیشن لیڈر شہریار مہر کی نجی قرارداد کثرت رائے سے مسترد،

یہ تصور ہی غلط ہے کہ ٹی ایم ایز کو جاری کردہ فنڈز غلط استعمال ہو رہے ہیں یا حکومت نے فنڈز کے غلط استعمال کی اجازت دی ہے،سکندر میندھرو ، , سندھ حکومت کی تاریخ میں پہلی دفع بلدیاتی اداروں کو پابند کیا گیا ہے کہ وہ اپنے اخراجات کے بارے میں ساری تفصیلات ویب سائٹ پر ڈالی ہیں ،شرجیل انعام میمن

کراچی ( اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔03مارچ۔2015ء ) سندھ اسمبلی نے منگل کو اپوزیشن لیڈر شہریار خان مہر کی نجی قرار داد کثرت رائے سے مسترد کر دی ، جس میں مطالبہ کیا گیا تھا کہ حکومت سندھ محکمہ بلدیات کے ذریعہ اس امرکو یقینی بنائے کہ ٹاوٴن میونسپل ایڈمنسٹریشنز ( ٹی ایم ایز ) کے فنڈز اسی مقصد کے لیے خرچ کیے جائیں ، جس مقصد کے لیے جاری کیے جاتے ہیں ۔

قرار داد میں کہا گیا کہ ان فنڈز کی فراہمی کا مقصد یہ ہے کہ علاقوں کی صفائی کی جائے ، نالوں کی مینٹی ننس کی جائے اور سیوریج نالوں کے پمپنگ اسٹیشن کام کر رہے ہیں ۔ وزیر بلدیات و اطلاعات شرجیل انعام میمن اور وزیر پارلیمانی امور ڈاکٹر سکندر میندھرو نے اس قرارداد کی مخالفت کی اور کہا کہ یہ تصور ہی غلط ہے کہ ٹی ایم ایز کو جاری کردہ فنڈز غلط استعمال ہو رہے ہیں یا حکومت نے فنڈز کے غلط استعمال کی اجازت دی ہے ۔

قرار داد پر شہریارخان مہر کے علاوہ ایم کیو ایم کے ارکان محمد حسین ، ظفر احمد خان کمالی ، مسلم لیگ (فنکشنل) کے نندکمار اور رفیق بانبھن اور دیگر اپوزیشن ارکان نے بھی خطاب کیا اور کہا کہ بلدیاتی ادارے تباہ ہو چکے ہیں ۔ پورے صوبے میں کہیں بھی صفائی نہیں ہے ۔ گٹر ابل رہے ہیں ۔ لوگوں کو پینے کا پانی میسر نہیں ۔ سڑکوں کی حالت بہت خراب ہے ۔

مسلم لیگ (فنکشنل) کے ارکان نے یہ الزام عائد کیا کہ بلدیاتی اداروں میں کرپشن اور لوگ پیسے دے کر تعینات ہوتے ہیں ۔ شرجیل انعام میمن نے کہا کہ سندھ حکومت کی تاریخ میں پہلی دفع بلدیاتی اداروں کو پابند کیا گیا ہے کہ وہ اپنے اخراجات کے بارے میں ساری تفصیلات ویب سائٹ پر ڈالیں تاکہ پوری دنیا کو پتہ چل سکے کہ ان اداروں کی رقم کس مد میں خرچ ہوئی ۔

انہوں نے کہا کہ جو ٹاوٴن میونسپل آفیسر کرپشن میں ملوث ہو گا یا غلط کام کرے گا ، وہ جیل جائے گا ۔ اس کے خلاف سخت سے سخت کارروائی ہو گی ۔ انہوں نے کہا کہ فنڈز کے استعمال کی نگرانی ارکان اسمبلی بھی کریں گے ۔ انہوں نے کہا کہ بلدیاتی اداروں کی تباہی پرویز مشرف کے دور سے شروع ہوئی ، جب ناظمین کو صحت ، تعلیم اور دیگر محکموں کے اختیارات دیئے گئے ۔

ایس ایس پیز کی اے سی آرز بھی ناظم

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

03/03/2015 - 22:18:54 :وقت اشاعت