دوران ڈکیتی شہری کو قتل کرنے کے مقدمہ میں سزائے موت پانے والے دو مجرموں کی پھانسی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل مارچ

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 03/03/2015 - 21:46:58 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 21:40:45 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 21:33:34 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 21:32:35 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 21:32:35 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 21:32:35 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 21:31:37 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 21:31:37 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 21:31:37 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 21:18:25 وقت اشاعت: 03/03/2015 - 21:18:25
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

دوران ڈکیتی شہری کو قتل کرنے کے مقدمہ میں سزائے موت پانے والے دو مجرموں کی پھانسی پر عملدرآمد 6مارچ تک روک دیاگیا

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔03مارچ۔2015ء) انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت کے آنند رام سیرانی نے دوران ڈکیتی شہری کو قتل کرنے کے مقدمہ میں سزائے موت پانے والے دو مجرموں فیصل اور افضال کی پھانسی پر عملدرآمد 6مارچ تک روک دیا ہے، واضح رہے کہ مجرموں کے اہلخانہ نے عدالت کی جانب سے جاری کئے گئے بلیک وارنٹ کے خلاف سندھ ہائی کورٹ سے رجوع کیا تھا اور سندھ ہائی کورٹ نے پھانسی کی سزا کے منتظر دو نوں مجرموں کے بلیک وارنٹ 5یوم تک معطل کرتے ہوئے ماتحت عدالت سے رجوع کرنے کا حکم دیا تھا۔

منگل کو سماعت کے موقع پر عدالت میں مجرموں فیصل اور افضال کے اہلخانہ پیش ہوئے اور عدالت کو آگاہ کیا کہ مقتول عبدالجبار کے اہل خانہ نے محمد فیصل اور محمد افضال کو معاف کردیا ہے جبکہ ان کو معاوضہ بھی دیا جاچکا ہے جبکہ سندھ ہوئی کورٹ میں بھی اس حوالے سے درخواست دائر کی گئی تھی جس پر عدالت عالیہ نے بلیک وارنٹ پر عملدرآمد روتے ہوئے صلح نامہ کیلئے انسداد دہشت گردی کی عدالت سے رجوع کرنے کی ہدایت کی تھی لہذا استدعا ہے کہ مقتول کے اہلخانہ نے ان کے بیٹوں کو معاف کردیا

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

03/03/2015 - 21:32:35 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان