حرام اشیاء کی تجارت اللہ اوراسکے رسول سے کھلی جنگ ہے،سُنّی تحریک علماء بورڈ
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات فروری

مزید مقامی خبریں

وقت اشاعت: 26/02/2015 - 22:43:51 وقت اشاعت: 26/02/2015 - 22:42:54 وقت اشاعت: 26/02/2015 - 22:40:18 وقت اشاعت: 26/02/2015 - 22:40:18 وقت اشاعت: 26/02/2015 - 22:37:31 وقت اشاعت: 26/02/2015 - 22:37:31 وقت اشاعت: 26/02/2015 - 22:36:26 وقت اشاعت: 26/02/2015 - 22:36:26 وقت اشاعت: 26/02/2015 - 22:17:57 وقت اشاعت: 26/02/2015 - 22:14:36 وقت اشاعت: 26/02/2015 - 22:14:36
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

حرام اشیاء کی تجارت اللہ اوراسکے رسول سے کھلی جنگ ہے،سُنّی تحریک علماء بورڈ

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔26فروری 2015ء)سُنی تحریک علماء بورڈنے ملک میں حرام اجزاء سے تیار شدہ فوڈ آئٹمز کی فروخت پرشدیدتشویش کا اظہارکرتے ہوئے اپنے شرعی اعلامیے میں کہاہے کہ حرام اشیاء کی تجارت اللہ اور اسکے رسول سے کھلی جنگ ہے ۔ حرام اشیاء کی تجارت کرنا حرام ہے۔ اللہ اور اس کے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے شراب ،مردار، خنزیر اور بتوں کی بیع کو حرام قرار دیا ہے۔

حرام کاایک لقمہ کھانے سے بندہ چالیس دن تک اللہ کی نگاہ ِ رحمت سے محروم رہتاہے۔لوگوں کو لقمہ حرام سے بچاناحکومت کا شرعی فرض ہے۔لہذاحکومت کو چاہئے کہ حرام اشیاء کی خریدوفروخت کی روک تھام کیلئے فوری کردار ادا کرے ۔مفتی قاضی سعیدالرحمن کی زیرصدارت مرکزاہلسنّت پرمنعقدہ سُنی تحریک علماء بورڈکے اجلاس کے اعلامیے میں کہاگیاکہ قرآن وسنت میں حرام اشیاء کی

مکمل خبر پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

26/02/2015 - 22:37:31 :وقت اشاعت