حکمرانوں کو خبردار کرتے ہیں کہ سقوط ڈھاکہ حقوق غصب کرنے کی ہی وجہ سے وقوع پذیر ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل فروری

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 24/02/2015 - 22:39:56 وقت اشاعت: 24/02/2015 - 22:39:56 وقت اشاعت: 24/02/2015 - 22:39:56 وقت اشاعت: 24/02/2015 - 22:38:51 وقت اشاعت: 24/02/2015 - 22:38:51 وقت اشاعت: 24/02/2015 - 22:38:51 وقت اشاعت: 24/02/2015 - 22:37:34 وقت اشاعت: 24/02/2015 - 22:37:34 وقت اشاعت: 24/02/2015 - 22:35:51 وقت اشاعت: 24/02/2015 - 22:35:51 وقت اشاعت: 24/02/2015 - 22:35:51
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

حکمرانوں کو خبردار کرتے ہیں کہ سقوط ڈھاکہ حقوق غصب کرنے کی ہی وجہ سے وقوع پذیر ہوا تھا‘ پاک چین راہداری منصوبہ صرف روٹ نہیں بلکہ ایک پراجیکٹ ہے جس میں سڑک کے ساتھ ساتھ ریلوے لائن ، انڈسٹریل زون، اور دیگر سہولیات شامل ہیں‘ وفاقی حکومت کو جنوبی پنجاب سے بھی کوئی دلی لگاوٴ نہیں ہے منصوبے کی تبدیلی جنوبی پنجاب ، خیبر پختونخوا اور بلوچستان کا معاشی قتل ہے‘ وفاقی کابینہ کے اجلاس میں گوادر کاشغر روٹ کے حوالے سے فیصلے دراصل پنجاب اور چھوٹے صوبوں کے درمیان جنگ چھیڑنے کی سازش ہے ‘ گوادر کاشغر منصوبے کو اس کے اصل روٹ پر تعمیر کیا جائے اور اس منصوبے کے روٹ تبدیل کرنے کے خلاف ہر قسم کی مزاحمت کی جائے گی‘چھوٹے صوبوں کے مفادات اور حقوق غصب کئے گئے تو اس کے خوفناک نتائج برآمد ہونگے جس کی تمام تر ذمہ داری مرکزی حکومت پر عائد ہوگی‘ وفاقی کابینہ کے اجلاس کے ،فیصلوں سے مرکزی حکومت کے اس جھوٹ کا بھی پول کھل کر سامنے آگیا ہے اے این پی حکومت کے اس آمرنہ فیصلے کے خلاف جلد اپنی حکمت عملی تیار کرے گی،

عوامی نیشنل پارٹی سندھ کے صدر سینیٹر شاہی سید کا بیان

کراچی(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار. 24 فروری 2015ء) عوامی نیشنل پارٹی سندھ کے صدر سینیٹر شاہی سید کہا ہے کہ پاک چین راہداری منصوبے کی منظوری کے فیصلے کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ مخصوص مفادات کے تحفظ کیلئے چھوٹے صوبوں کے حقوق غصب کئے جا رہے ہیں ، منگل کو اپنے بیان میں انہوں نے واضح کیا کہ اسلام آباد میں عوامی نیشنل پارٹی نے اس سلسلے میں اے پی سی طلب کی تھی اور اس میں شریک تمام سیاسی جماعتوں نے اس بات پر اتفاق کیا تھا کہ گوادر کاشغر منصوبے کو اس کے اصل روٹ پر تعمیر کیا جائے اور اس منصوبے کا روٹ تبدیل کرنے کے خلاف ہر قسم کی مزاحمت کی جائے گی ، سینیٹر شاہی سید نے کہا کہ وفاقی کابینہ کے اجلاس میں چھوٹے صوبوں کے مفادات کو روند کر ان کے احساس محرومی میں مزید اضافہ کیا گیا ہے اور مرکزی حکومت کے اس جھوٹ کا بھی پول کھل کر سامنے آگیا ہے جس میں کہا گیا تھا کہ گوادر کاشغر منصوبے میں کوئی تبدیلی نہیں کی جا رہی ، انہوں نے کہا کہ ہم پنجاب کی ترقی کے ہر گز خلاف نہیں تاہم اس کیلئے چھوٹے صوبوں کی قربانی دینا کسی صورت قبول نہیں ،انہوں نے کہا کہ پاک چین راہداری منصوبہ صرف روٹ نہیں بلکہ ایک پراجیکٹ ہے جس میں سڑک کے ساتھ ساتھ ریلوے لائن ، انڈسٹریل زون، اور دیگر سہولیات شامل ہیں لہٰذا پراجیکٹ کو مکمل ختم کیا گیا ہے اور صرف سڑک خیبر پختون خوا کو دینا لوگوں کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کے برابر ہے۔

انہوں نے کہا کہ وفاقی کابینہ میں اس روٹ کے حوالے سے کیا جانے والا فیصلہ کسی صورت درست نہیں اور اے این پی حکومت کے اس آمرنہ فیصلے کے خلاف جلد اپنی حکمت عملی تیار کرے گی اور اس منصوبے کو اس کے اصل روٹ پر بحال کرایا جائے گا، انہوں نے کہا کہ ہم نے پہلے بھی چینی سفیر سے اہم مسئلے پر بات چیت کر چکے ہیں تاہم اب چین کو بھی چاہئے کہ یہ منصوبہ دراصل چھوٹے صوبوں کی معیشت کی بہتری کیلئے ہے لہٰذا اس پر من وعن عمل ہونا چاہیئے۔



اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

24/02/2015 - 22:38:51 :وقت اشاعت