بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات،27ذوالحج 1435ھ،23 اکتوبر2014ء

آج کا سوال

پاکستان تحریک انصاف اور عوامی تحریک کے کارکن اسلام آباد میں دھرنا دیئے بیٹھے ہیں، عمران خان اور طاہر القادری دونوں نے نواز شریف کے استعفی کے مطالبہ سمیت مختلف مطالبات کئے ہیں۔ آپ کے خیال کیا دونوں‌جماعتوں کا دھرنا حکومت کے خاتمے کا سبب بنے گا؟؟؟
آپ اس سوال پر ووٹ دینے کے علاوہ اپنا تبصرہ بھی شامل کر سکتے ہیں۔
حکومت کو دونوں دھرنوں سے کوئی خطرہ نہیں۔
جوں‌جوں وقت گزرتا جائے گا دھرنا حکومت کیلئے خطرہ بنتا جائے گا۔ یہ دھرنے حکومت ڈوبنے کا سبب بنیں‌گے۔
نتائج
سوال پر رائے دیجئے۔

دوسرے قارئین کی رائے پڑھئیے۔

حالیہ تبصرے

عمران علی 23-10-2014 09:33:10

بھت اچھی سائیٹ ہے۔

  مضمون دیکھئیے
عبدالماجد 23-10-2014 09:04:04

افسوس افسوس کھ عد لیھ مافادات مین دوبارا گیھر گیِ اور عوام کا حون پسینھ رایگا گی افسوس افسوس میر شکیل الرحمان اپ نے پاکستان کو تباھ کیا عدلیھ مین نون ..

  مضمون دیکھئیے
ھاجرا کھان بادہزای 23-10-2014 08:48:27

اولما نے تھیک فرمایا ھے۔عمران کواب دھرنا ترک کر دینا چا ھے۔ھالات کا تقازا بھی ھے اور وقت کیزررورت بھئ۔

  مضمون دیکھئیے
آکاش عباسی 22-10-2014 23:38:08

فارم بھیج دیں مہربانی ہو گی آپ کی

  مضمون دیکھئیے
آکاش عباسی 22-10-2014 23:36:23

مجھے اس سکیم کے تحت گاڑی مل جائے گی کیا۔۔۔۔۔۔شرائط کیا ہیں

  مضمون دیکھئیے
مبشر گل 22-10-2014 23:02:26

اسلام وعلیکم کے بعد ارز ہے کے راے تو میں نہیں دے سکتا مگر اتنا کہ سکتا ہوں کے پردیس میں بیٹھے پاکستانی لوگو کے بارے میں بہی کوچھ لکھا کریں یہاں ہمیں کین مسایل ..

  مضمون دیکھئیے

تلاش کیجئے

تازہ ترین خبریں (2014-10-23)

کوئٹہ:مسلح افراد کی بس میں گھس کر فائرنگ، ہزارہ برادری کے 8 افراد جاں بحق

کوئٹہ میں نامعلوم مسلح افراد کی فائرنگ سے آٹھ افراد جاں بحق اور ایک زخمی ہو گیا ، ہزارہ ڈیموکرٹیک پارٹی اور تحفظ عزاداری کونسل نے کوئٹہ میں تین روزہ سوگ کا اعلان کر دیا۔  کوئٹہ کے علاقے ہزار گنجی میں ایک بار پھر آٹھ سے دس نامعلوم مسلح افراد نے مسافر کوچ کو گھیر لیا ۔ چار مسلح افراد بس میں داخل ہوئے اور فائرنگ شروع کر دی ۔ فائرنگ سے نو افراد زخمی ہوئے جنہیں ہسپتال منقل کیا جا رہا تھا کہ 8 افراد دم توڑ گئے ، ایک زخمی کو سی ایم ایچ منتقل کر دیا گیا ہے۔ ایس ایس پی اعتزاز احمد کا کہنا تھا کہ سیکورٹی ٹیم ان کے ساتھ تھی تاہم سبزی فرشوں نے خریداری کے بعد انہیں واپس جانے کی اطلاع نہیں دی۔ ہزار گنجی واقعہ پر ہزارہ ڈیموکرٹیک پارٹی اور تحفظ عزاداری نے تین روزہ سوگ کا اعلان کیا ہے ۔ وزیر اعلیٰ بلوچستان ڈاکٹر عبدالمالک اور گورنر بلوچستان نے واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے واقعہ میں ملوث ملزمان کی فوری گرفتاری کی ہدایت کی ہے۔

اہم خبریں -فن و فنکار -کھیل -