بند کریں
اتوار جنوری

مزید متفرق مضامین

پچھلے مضامین - مزید مضامین
چین کا ایسا شہری جو روزانہ ڈھائی کلو مرچیں ہڑپ کرجاتا ہے
جنوبی ایشیا اور خصوصاً ہندو پاک میں کوئی بھی ڈش مرچوں کے بغیر بننے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا جب کہ اس کے مقابلے میں چین کے لوگ انتہائی کم اور نہ ہونے کے برابر مرچوں کااستعمال کرتے ہیں
جنوبی ایشیا اور خصوصاً ہندو پاک میں کوئی بھی ڈش مرچوں کے بغیر بننے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا جب کہ اس کے مقابلے میں چین کے لوگ انتہائی کم اور نہ ہونے کے برابر مرچوں کااستعمال کرتے ہیں تاہم ایک چینی باشندہ ایسا بھی ہے جو روزانہ ڈھائی کلو پسی ہوئی سرخ مرچیں ہڑپ کر جاتا ہے۔
چینی اخبار کے مطابق وسطی صوبے ہنان کے علاقے شنزینگ کا ایک شخص ڑینگ زو اپنے علاقے میں سرخ مرچوں کے بادشاہ کے نام سے جانا جاتا ہے کیوں کہ وہ روزانہ ڈھائی کلو سرخ مرچیں کھاتا ہے اور اس کے باوجود وہ صحت مند ہے اور60 سال سے زیادہ عمر میں بھی مکمل چاق و چوبند ہے۔
ڑینگ زو کی اس عجیب و غریب عادت کی وجہ سے چین کا یہ علاقہ دنیا بھر میں مشہور ہوگیا ہے۔
ڑینگ زو صبح اٹھ کر سب سے پہلے مٹھی بھر مرچیں کھاتا ہے پھر اس کے بعد دانت صاف کرتا ہے، اس کا کہنا ہے کہ وہ انڈے اور گوشت کے بغیر تو کھانا کھا سکتا ہے لیکن مرچوں کے بغیر تو کھانا کھانے کا وہ سوچ بھی نہیں سکتا، پسی ہوئی اور ثابت سرخ مرچیں روکھا کھانے کے علاوہ وہ پکے ہوئے کھانوں میں بھی تیز مرچ مصالحے پسند کرتا ہے۔

اس حیرت انگیز شوق رکھنے والے شخص کا کہنا ہے کہ اسے یوں تو مرچیں کھانے کا شوق تو بچپن ہی سے تھا تاہم وہ بڑی مقدار میں مرچیں گزشتہ 10 سال سے کھارہا ہے اور اسے اس حوالے سے کسی قسم کے طبی مسئلے کا بھی سامنا نہیں کرنا پڑا، اس کے علاوہ وہ بالکل عام لوگوں جیسا ہے اور اس میں کوئی اورخاصیت نہیں۔
ڑینگ زو نے چین میں ہونے والے مرچ کھانے کے متعدد مقابلے جیت کر شہرت حاصل کی ہے اور اب وہ اپنے علاقے میں سرخ مرچوں کا فارم بھی چلا رہا ہے جہاں 8 مخلتف اقسام کی سرخ مرچیں کاشت کی جاتی ہیں۔
تاریخ اشاعت: 2015-10-27

(0) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان