بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
ہفتہ اکتوبر

تازہ ترین خبریں

لندن: کشمیر کے معاملے پر ہماری بات سنی جا رہی ہے اور عمل بھی ہو رہا ہے، پاکستان اور بھارت کو متوازن سوچ رکھنی چاہئیے ، لندن سے وطن واپس روانگی سے قبل وزیر اعظم نواز شریف کی میڈیا سے گفتگو

لندن سے وطن واپس روانگی سے قبل میڈیا سے بات کرتے ہوئے وزیر اعظم نواز شریف کا کہنا تھا کہ پاکستان نےخطے میں امن کے لیے تجاویز پیش کی ہیں، خطے میں قیام امن کے لیے پاکستان کی تجاویز پر عمل کرنا ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ بھارت کو چاہئیے کہ وہ الزام تراشی سے گریز کرے کیونکہ الزام تراشی سے امن قائم نہیں ہو گا بلکہ کشیدگی بڑھے گی اور کشیدگی بڑھنے کا مطلب ترقیاتی کاموں میں رکاوٹ آئے گی، ان کا کہنا تھا کہ امن کے لیے وہی راستہ ہے جو پاکستان نے تجویز کیا ہے، اور پاکستان نے تمام تجاویز خلوص کے ساتھ پیش کی ہیں . پاکستان کے پاس بھارتی خفیہ ایجنسی را کی ملک میں مداخلت کے ثبوت موجود ہیں،پاکستان اور بھارت کو متوازن سوچ اختیار کرنی چاہئیے، انہوں نے واضح کہا کہ مسائل کا حل وہی ہے جو پاکستان نے تجویز کیا ہے آج آئیں یا کل راستہ یہی ہو گا۔ وزیر اعظم نواز شریف نے بتایا کہ عالمی سطح پر کشمیر کا مسئلہ سنا جا رہا ہے اور اس پر عمل بھی ہو رہا ہے

اہم خبریں -قومی خبریں -بین الاقوامی خبریں -کھیل -شوبز -عجیب و غریب -بزنس -کشمیر -

آج کا اخبار

برطانیہ دہشتگردوں کی عالمی فنڈنگ روکنے میں کردار اور مواصلاتی رابطوں کو روکنے میں مدد کرے، آرمی چیف کی برطانوی وزیر داخلہ سے ملاقات ، کشمیر تقسیم ہند کا نامکمل ایجنڈا ، عالمی برادری امن چاہتی ہے تو مسئلہ کشمیر کے حل میں مدد کرے، آرمی چیف، افغان عوام سے خون کا رشتہ ہے وہ ہمارے بھائی ہیں ، راحیل شریف کا لندن میں یونائیٹڈ سروسز انسٹی ٹیوٹ میں خطاب

آرمی چیف نے کہا کہ کشمیر تقسیم ہند کا غیر تکمیل شدہ نامکمل ایجنڈے اور خطے میں تمام تنازعات مسئلہ کشمیر کے ساتھ جڑے ہوئے ہیں عالمی برادری دنیا میں امن چاہتی ہے تو مسئلہ کشمیر کے حل میں مددکرے

پاکستانی مندوب ملیحہ لودھی کی بان کی مون سے ملاقات،دہشت گردی میں بھارت کے ملوث ہونے کے ثبوت فراہم کر دیئے،تین فائلوں پر مشتمل تحریری مواد،آڈیو اور ویڈیو ثبوت یو این جنرل سیکرٹری پیش کئے گئے ہیں،سرتاج عزیز،پاکستان میں دہشت گردی کے پیچھے بھارت کا ہاتھ ہے،مذاکرات سے فراری ہے،15 سے زائد ممالک کے وزرائے خارجہ کو بھارتی ہٹ دھرمی سے آگاہ کر دیا ہے،مشیر خارجہ کی پریس کانفرنس

منی لانڈرنگ کیس ،الطاف حسین 15 اکتوبر کو پولیس اسٹیشن میں پیش ہونگے ،ضمانت میں مزید توسیع یا فرد جرم عائد ہونے کا امکان

سانحہ منی میں 58 پاکستانی شہداء کی تصدیق ہوچکی ہے 26 کی تدفین کردی گئی ہے، طارق فضل، 100 لاپتہ ‘ 12 زیر علاج ہیں 37 زخمیوں کو ہسپتال سے فارغ کردیا گیا ہے،سانحہ منیٰ کے فوکل پرسن کی اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو

مارک سیگل کا بیان حقائق کے برعکس محض جھوٹ کا پلندہ ہے، حیرت ہوئی ،پرویز مشرف ،مارک سیگل اگر سچے ہیں تو انہوں نے اپنی زیرادارت شائع ہونیوالی بے نظیر بھٹو کی کتاب میں اس سچائی کا ذکر کیوں نہیں کیا؟، بے نظیر بھٹو کومجھ سے خطرہ ہوتا تو وہ مجھ سے سیکیوریٹی کیوں مانگتیں؟مخالفین مارک سیگل کے بیان کو پاکستان کے خلاف استعمال کرنا چاہتے ہیں،اس بیان کی جتنی بھی مذمت کی جائے وہ کم ہے،سابق صدر کی ڈاکٹر محمد امجد سے ٹیلی فونک گفتگو

ایم کیو ایم کے رہنما الطاف حسین کی جانب سے لاہور ہائیکورٹ میں بیان حلفی جمع کرا دیا گیا،عدالتی اختیار سماعت سے متعلق بات کرنے پر عدالت کاالطاف حسین کی وکیل عاصمہ جہانگیر پر سخت اظہار برہمی،فریقین کے وکلاء کو الطاف حسین کے بیان حلفی پر بحث کے لئے طلب کرلیا گیا

سپریم کورٹ کا رینجرز کو ڈاکٹر عاصم کو بہترین سہولیات فراہم کرنے کا حکم،ڈاکٹر عاصم کورینجرز کی حراست سے نکالنا خطرے سے خالی نہیں ،ہمیں توازن رکھنا ہے ڈاکٹر عاصم کی حفاظت اور علاج ساتھ ساتھ ہو،جسٹس دوست محمد کے ریمارکس،مزید سماعت7 اکتوبر تک ملتوی

پشاور، صوبائی کابینہ میں ایک وزیر کو فارغ کرنے کیلئے کارکر دگی کی بنیاد پر رپورٹ عمران خان کوارسال

پائلٹس سے ہڑتال ختم کرنے کی اپیل ہے ،ناصر جعفر، پائلٹ10 گھنٹے کام کرنا چاہتے ہیں ہم اس پر بھی تیار ہیں مگر وہ کام پر آمادہ تو ہوں، جب ہم نے پائلٹ سے بات کی تو ان کا کہنا تھا ہم بیمار ہیں ، پالپا کے ساتھ مذاکرات کے دروازے کھلے ہیں،اپنے مطالبات بتائیں ، 12 ، 12 ماہ تک بات چیت چلتی رہی ہے لیکن کبھی ی ایسا نہیں ہوا کہ جہاز کھڑے کردیئے گئے ہوں،سی بی اے ملازمین اور مسافروں نے بہت تعاون کیا ،موجودہ صورتحال سے مسافر پریشان ہیں ،چیئرمین پی آئی اے کی پریس کانفرنس

سابق حکومت کے قرض واپس کرنے کیلئے ہمیں آئی ایم ایف کے پاس جانا پڑا ، دسمبر 2017ء تک توانائی بحران کے حل کیلئے کئی منصوبوں پر کام جاری ہے ، حکومت مختلف پیکجز کا اعلان کرکے ملک میں سرمایہ کاری بڑھانے کے اقدامات کررہی ہے ، وزیر خزانہ اسحق ڈار کی نجی ٹی وی چینل سے گفتگو

کے الیکٹرک کو گیس کا کوئی غیر قانونی کنکشن یا سپلائی حاصل نہیں، ترجمان،تمام ادائیگیاں باقاعدگی سے کی جاتی ہیں،کے الیکٹرک نے اپنے خلاف لگائے گئے الزامات مسترد کردئیے

شاہد آفریدی پر شرمناک الزامات لگانیوالی بھارتی اداکارہ عرشی خان کا پاکستان آنے کا اعلان

اہم خبریں -قومی خبریں -بین الاقوامی خبریں -کھیل -

آج کا کارٹون

حالیہ تبصرے

رمیز احمد 19-01-2017 11:37:14

بہت اچھا فیچر ہے

  مزید
syed shoaib 07-12-2016 12:36:53

isko kisi gahar ki baho baeti bnana chahie na kae bahaer bae parda hoo chand rs. kae khatiryae kaam to mardoon ka hae

  مزید
Abdul salam. 07-12-2016 10:09:21

AOA.Thankyou so much please.Your efforts are highly appreciated please for giving us NEWS in very nice briefly.With regards please.

  مزید
Aqib Abbasi 06-12-2016 15:58:32

Imran khan ko kafi arsay say larkiyan nachany ka moqa nai mila abhi woh moqa dhound rahay hain mil nai raha kindly ab Pajama leaks evidence tou lao awam itni pagil nai ha k ap k jotay ilzamat pay yaqin kar k ap ko ainda election main PM jaisi post pay lay jahay

  مزید
اشفاق احمد 05-12-2016 19:22:44

سامان سو برس کا پل کی خبر نہیں

  مزید
اشفاق احمد 05-12-2016 16:55:34

شیطان اور اس بھائیوں پہ اللہ پاک کی کروڑ کروڑ نعنت

  مزید

ہماری ای میل لسٹ میں شامل ہوں

آج کا سوال

آج کا سوال
وزیراعظم نواز شریف اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کیلئے اس وقت امریکہ میں موجود ہیں جبکہ بھارتی وزیراعظم بھی اسی مقصد کیلئے امریکہ میں‌موجود ہیں۔ بھارتی وزیراعظم کی مصروفیات کا مرکز دُنیا کی معروف کمپنیوں کا دورہ ہے جبکہ وزیراعظم نواز شریف مختلف ممالک کے سربراہان سے ملاقات میں مصروف ہیں؟ آپ کے خیال میں کیا وزیراعظم نواز شریف کو بھی پاکستان میں سرمایہ کاری سے متعلق بھارتی وزیراعظم کی طرح اعلی سطحی ملاقاتیں کرنی چاہئیں؟؟
آپ اس سوال پر ووٹ دینے کے علاوہ اپنا تبصرہ بھی شامل کر سکتے ہیں۔
دونوں وزرائے اعظم کا اپنا ایجنڈا ہے اور دونوں اپنے ایجنڈے پر ہی چل رہے ہیں۔
بھارتی وزیراعظم اپنے دورہ امریکہ کا بھرپور فائدہ اُٹھا رہے اور اسے بھارتی ترقی کیلئے فائدہ میں‌لا رہا ہے۔
وزیراعظم نواز شریف کا دورہ خالصتا اقوام متحدہ سے متعلق ہے۔ اُن کے سرکاری دورہ امریکہ میں‌ایسی ملاقاتوں کا شائد کوئی امکان ہو۔
نتائج
سوال پر رائے دیجئے۔

دوسرے قارئین کی رائے پڑھئیے۔