بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
ہفتہ اگست

تازہ ترین خبریں

تحریک انصاف اور حکومت کے درمیان انتخابی اصلاحات اور جو ڈیشل کمیشن کے قیام پر اتفاق ،وزیر اعظم کے استعفیٰ پر ڈیڈ لاک،پاکستان تحریک انصاف نے وزیر اعظم نواز شریف کے ایک ماہ کیلئے مستعفی یا چھٹی پر چلے جانے کی تجویز پیش کردی،بے شک اسمبلیاں تحلیل کی جائیں اور نہ ہی کابینہ کو چھیڑا جائے ،جوڈیشل کمیشن سے فیصلہ خلاف آنے پر حکومت کو مستعفی ہونا پڑیگا ، شاہ محمود قریشی ،حکومتی مذاکراتی کمیٹی نے وزیر اعظم کے استعفے کے مطالبہ کو مسترد کردیا ، لگتا ہے تحریک انصاف مائنس ون فارمولا چاہتی ہے ، وزیر اعظم کا استعفیٰ بغیر ثبوت کے سزا دینے کے مترادف ہوگا ،وفاقی وزراء احسن اقبال ، عبد القادر بلوچ اور گور نر پنجاب کی میڈیا سے گفتگو

پاکستان تحریک انصاف اور حکومت کے درمیان انتخابی اصلاحات اور جو ڈیشل کمیشن کے قیام پر اتفاق کے باوجود وزیر اعظم کے استعفیٰ کے نکتہ پرڈیڈ لاک پیدا ہونے سے مذاکرات کا تیسرا دور ناکام ہوگیا ، پاکستان تحریک انصاف نے تجویز پیش کی ہے کہ وزیر اعظم نواز شریف ایک ماہ کیلئے مستعفی ہو ں یا چھٹی پر چلے جائیں ،بے شک اسمبلیاں تحلیل کی جائیں اور نہ ہی کابینہ کو چھیڑا جائے جبکہ حکومتی مذاکراتی کمیٹی نے وزیر اعظم کے استعفے کے مطالبہ کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ لگتا ہے تحریک انصاف مائنس ون فارمولا چاہتی ہے ، وزیر اعظم کا استعفیٰ بغیر ثبوت کے سزا دینے کے مترادف ہوگا ۔ہفتہ کو پاکستان اور تحریک انصاف کے درمیان مذاکرات کا تیسرا دور مقامی ہوٹل میں ہوا حکومتی مذاکراتی کمیٹی کی سربراہی گور نر پنجاب چوہدری محمد سرور کررہے تھے وفد میں وفاقی وزراء پرویز رشید ، احسن اقبال ، عبد القادر بلوچ اور زاہد حامد شامل تھے جبکہ تحریک انصاف کمیٹی شاہ محمود قریشی ، جاوید ہاشمی، اسد عمر، عارف علوی اور پرویز خٹک پر مشتمل تھی تیسرے دور میں تحریک انصاف کی جانب سے حکومتی مذاکراتی کمیٹی کے سامنے چھ مطالبات رکھے گئے جن میں سے دو مطالبات انتخابی اصلاحات اور دھاندلی کی تحقیقات کیلئے جو ڈیشل کمیشن کے قیام پر اتفاق ہوسکا تاہم وزیر اعظم نواز شریف کے استعفے پر کوئی پیش رفت نہیں ہوسکی

اہم خبریں -قومی خبریں -بین الاقوامی خبریں -کھیل -شوبز -مقامی خبریں -عجیب و غریب -بزنس -کشمیر -

پاکستانیو!نیا پاکستان اسلئے بنانا چاہتا ہوں کہ جلد شادی کرلوں،عمران خان
اپنے مقاصد کے حصول کو زندگی اور موت کا مسئلہ نہ بنائیں ،سراج الحق ، ڈاکٹر طاہر القادری ملک میں قومی حکومت کا قیام چاہتے ہیں تو پھر انہیں تمام سیاسی جماعتوں میں اس حوالے سے اتفاق رائے پیدا کرنا ہوگا،امیرجماعت اسلامی پاکستان سراج الحق کی دھرنا دینے والی دونوں جماعتوں سے اپیل
حکومت نے ریڈ زون میں دہشتگرد داخل کر دیئے، طاہر القادری کا دعویٰ، کارکنوں کی اذانیں
وزیر اعظم صرف ایک ماہ کیلئے مستعفی ہو جائیں ، انکوائری کے بعد فیصلہ نواز شریف کے حق میں آیا تو وزیر اعظم تسلیم کرلینگے ،عمرا ن خان ، ہمارے وکلاء پیر کو کنٹینرز کے خلاف سپریم کورٹ میں جائینگے ، آصف علی زر داری اور نواز شریف نہیں عمران خان حقیقی جمہوریت لائیگا ، (کل)اتوار کورات آٹھ بجے براہ راست ملک بھر میں ہونے والے دھرنوں سے خطاب کرونگا ،نواز شریف کے استعفے کا بعد کراچی اور کوئٹہ کا بھی رخ کرونگا ، آزادی مار چ سے خطاب

آج کا اخبار

سابق صدر آصف علی زرداری نے وزیراعظم کے ظہرانے اور ملاقات کی دعوت قبول کرلی ، پہلے وزیراعظم اور آصف علی زرداری کے درمیان ون آن ون ملاقات ہوگی ، بعد میں دونوں رہنما پارٹی کے سینئر رہنماؤں کی موجودگی میں مشاورت بھی کرینگے، حکومت سیاسی مسائل کو ڈائیلاگ کے ذریعہ حل کرنے پر یقین رکھتی ہے تمام اہم پارلیمانی جماعتیں اس عزم کا اعادہ کرچکی ہیں کہ وہ جمہوریت کو ڈی ریل نہیں ہونے دیں گی،نواز شریف، حکومت اور اپوزیشن مل کر اس بحران سے نکلنے کے لیے تمام آئینی آپشنز کے مطابق مسائل کا حل تلاش کریں گی،دونوں رہنماوں کا اتفاق

وزیر اعظم نے کہا کہ حکومت نے احتجاج کرنے والی جماعتوں کے خلاف صبر و استقامت کی پالیسی اختیار کی ہے ۔کیونکہ ہم طاقت کو مسائل کا حل نہیں سمجھتے

حکومت اورپاکستان تحریک انصاف کے درمیان مذاکرات کادوسرادوربھی بے نتیجہ ختم ،با ت چیت کے دوران حکومتی کمیٹی نے ہمارے مطالبات کے حوالے سے اپنانقطہ نظرپیش کیاہے ،آج مشاورت کے بعدہی بات چیت کاایک اوردورہوگا،شاہ محمودقریشی ، پاکستان تحریک انصاف نے اپنے استعفے قومی اسمبلی میں جمع کروادیئے

پاکستانیوں کوبادشاہوں سے نجات دلاوٴں گایاموت قبول ہوگی ،عمران خان ،سیاسی جماعتوں کوچیلنج کرتاہوں ،خیبرپی کے میں دھاندلی کے خلاف مجمع اکٹھاکرکے دکھائیں ،اگلے دن انتخابات کااعلان کروں گااورپہلے سے دوگنے ووٹ لیکردکھاوٴں گا،چیئرمین تحریک انصاف کادھرنے کے شرکاء سے خطاب اورانٹرویو

اب بہت ہوگیا، یہ آخری لائن ہے اس سے آگے کوئی بھی جماعت گئی کسی پولیس اہلکار پر حملہ کیا گیا یا قانون توڑا گیا تو قانون اپنا بھرپور دفاع کرے گا ، ،چوہدری نثار علی خان ،حکومت نے اب تک برداشت ، صبر اور لچک کا بھرپور مظاہرہ کیا ہے ، عمران خان ماڑ دھاڑ اور بدتہذیبی کا ٹریلر بند کرکے مذاکرات کی میز پر آئیں ، عمران خان اور طاہر ا لقادری نے وفاقی حکومت کو جلسوں کیلئے لکھ کر دی گئی تحریری معاہدوں کی خلاف ورزی کی اس کے باوجود وزیراعظم میاں محمد نواز شریف کی ہدایت پر انہیں پارلیمنٹ ہاؤس تک آنے کی اجازت دی گئی ، خون خرابہ ، یلغار اور قانون کو ہاتھ میں لینے والوں کیخلاف قانون ضرور حرکت میں آئیگا ، چیف آف آرمی سٹاف سے ملاقاتیں معمول کا حصہ اور اندرونی سکیورٹی کے معاملات کے حوالے سے ہیں دو خود کش حملہ آور اور ایک بارود سے بھری گاڑی داخل ہوسکتی ہے جن کا نشانہ مارچ کے شرکاء ہیں ، عمران خان نے نواز شریف کو گالم گلوچ کرکے اپنا سیاسی قد کاٹھ کم کیا ہے ، ان کی نواز شریف سے ذاتی دشمنی نہیں سیاسی لڑائی کو ان کے بچوں تک لے گئے ہیں ، عام انتخابات میں مقناطیسی سیاہی کے استعمال کی تجویز ہماری نہیں تھی ، جس نے یہ ڈرامہ رچایا ان کو پکڑا جائے ، عمران خان کے تمام الزامات اپنی جگہ مگر سیکرٹری داخلہ جیسے شخص پر انہوں نے ایسے بے بنیاد الزامات لگائے جن کا کوئی جواز نہیں بنتا ، ، خدارا الزامات کی سیاست کو چھوڑ کر پاکستان اور پاکستان کی عزت کا سوچا جائے ، پریس کانفرنس

اسلام امن و آشتی کا مذہب ہے جس کا ظلم و بربریت اور دہشت گردی سے کوئی تعلق نہیں‘ اس وقت ملک میں ظلم و بربریت کی انتہاء کردی گئی ہے‘ انصاف کا حصول تک ناممکن ہوگیا‘ ڈاکٹر طاہرالقادری ،ہم نے حکمرانوں سے دلیل کی بنیاد پر سوالات پوچھے اور اپنا حق طلب کیا لیکن نواز اور شہباز دلیل کی بجائے دھونس دھمکی دھاندلی‘ دہشت گردی اور قتل و غارتگری سے بات کرتے ہیں‘ حکمرانوں میں اخلاقی جرات تک ختم ہوگئی‘ چودہ ماہ کے اقتدار میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں کی گئیں‘ نہتے پاکستانیوں پر براہ راست گولیاں چلاکر قتل عام کیا گیا ، ان کیخلاف ایف آئی آر تک درج نہ ہوسکی ہم گھر سے مظلوموں کی مدد کیلئے نکلے ہیں، مظلوم عوام کو حق دلاکر ہی واپس جائیں گے‘ حکمرانوں نے عدالتوں اور پولیس سمیت تمام سول اداروں کو یرغمال بنا رکھا ہے جن سے انصاف کی توقع نہیں‘ چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ کو جبراً چھٹی پر بھیج کر اپنے سابق وکیل کو قائم مقام چیف جسٹس لگادیا گیا ہے‘ ایسے میں انصاف کیسے مل سکتا ہے۔ دھرنا کے شرکاء کو خطبہ جمعہ

پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری جمہوریت بچانے اور موجودہ سیاسی صورت حال کو حل کرنے کے لیے محترک ہو گئے ، بلاول ہاوٴس سے مختلف سیاسی جماعتوں کے رہنماوٴں سے رابطے کئے، چوہدری شجاعت حسین، مولانا فضل الرحمن ،گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد خان اور پیپلز پارٹی کے رہنما اعتزاز احسن سے ٹیلیفون پر گفتگو ۔ ملک کی موجودہ سیاسی صورت حال ، عوامی تحریک اور تحریک انصاف کے دھرنوں ، ان کے مطالبات ، اس صورت حال کو حل کرنے کے لیے مختلف آپشنز پر غور کیا گیا

جج جاکر لوگوں کو شاہراہ دستور سے نہیں ہٹا سکتے یہ کام انتظامیہ کا ہے‘ حکومت کہاں ہے وہ اپنا فرض کیوں ادا نہیں کررہی ،سپریم کورٹ،حکومت کنٹینر ہٹائے اور مظاہرین شاہراہ دستور خالی کردیں۔ اپنے حقوق کی بجاء آوری میں دوسروں کے حقوق کی خلاف ورزی نہ کی جائے،جسٹس ثاقب نثار ،سیاسی معاملات میں مداخلت عدلیہ کے لئے نقصان دہ ہے۔ طا ہر القا در ی کا عدا لت میں جوا ب ،سما عت 25اگست تک ملتو ی

قومی اسمبلی اجلاس ، نواب علی وسان نے عمران خان کو سلطان راہی قرار دے دیا،حکومت پیر تک شاہراہ دستور خالی کروائے ورنہ ہم دیکھ لیں گے کہ کیسے شاہراہ دستور خالی نہیں ہوتی،محمود خان اچکزئی ،حکومت سانحہ لاہور کی ایف آئی آر کا اندراج کرے، اسلام آباد کو اپاہج بنادیا گیا ہے، پوری قوم وزیراعظم کی طرف دیکھ رہی ہے، مسلم لیگ (ن) اپنے اندر کی صفوں پر نظر رکھے ایسا نہ ہوکہ سازش ہوجائے،صاحبزادہ طارق اللہ،گذشتہ دنوں میڈیا کے ورکروں کیساتھ زیادتی کی باتیں ہوئی ہیں،یہ آزادی صحافت پر حملہ ہے، میڈیا پر حملے نہیں ہونے چاہئیں،خواجہ آصف،صحافیوں کو قانون نافذ کرنے والے اداروں نے بلاوجہ روکا ، سپیکر اس کا نوٹس لیں،سینیٹر پرویز رشید ودیگر کا قومی اسمبلی میں سیاسی صورتحال پر بحث میں اظہار خیال

یکم ستمبر سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا امکان، ایچ او بی سی 3 روپے 68 پیسے‘ ڈیزل کی قیمت میں 2 روپے 23 پیسے‘ پٹرول 2 روپے 78 پیسے‘ لائٹ ڈیزل 1 روپیہ 98 پیسے اور مٹی کے تیل میں 2 روپے فی لیٹر کمی ہو گی

بھارت میں پاکستانی ہائی کمشنر عبدالباسط اور حریت راہنماء شبیر احمد شاہ کیخلاف بغاوت کا مقدمہ درج کرلیا گیا

تحریک انصاف کو قومی اسمبلی سے استعفیٰ دینے کی جلدی نہیں کرنی چاہیے،سپیکر استعفے خود وصول نہ کریں،سراج الحق، امید ہے کہ معاملہ بہت جلد حل ہوجائے گا، مذاکرات جاری ہیں، ہمیں امید ہے کہ آئندہ اڑتالیس گھنٹوں میں کوئی نہ کوئی حل سامنے آجائے گا ، اقبال پارک ٹوپی گھاٹ فیصل آباد میں جلسہ عام سے خطاب، اگر وزیراعظم خود مستعفی ہوجائیں تو ان کا بڑا پن ہوگا ، حالیہ سیاسی بحران حل ہوجائے گا اگر ایسا نہیں ہوتا تو سپریم کورٹ کا کمیشن جو فیصلہ کرے اسے سب کو منظور کرنا چاہیے،لیاقت بلوچ

افغان سرحد سے 70 دہشت گردوں و اسمگلرز کی پاکستانی حدود میں داخلے کی کوشش،ایف سی کے ساتھ جھڑپ میں ایک اہلکار شہید ، منہ توڑ جوابی کارروائی سے متعدد حملہ آور زخمی و ہلاک

حکومت تماشہ لگانے والوں کیخلاف سخت ایکشن لے، پاکستان پیپلز پارٹی ، عمران اور طاہر القادری کے دھرنوں کی سیاست کو قبول کرلیا گیا تو کل عسکریت پسند پاکستان کے ایٹمی اثاثہ جات پر بھی قبضہ کرلینگے ،فرحت اللہ بابر

پاکستان ،بھارت کے درمیان پانچ متنازعہ بجلی گھروں پر سندھ طاس کمیشن کے مذاکرات بحال،بھارت کی دریائے چناب پر2110 میگاوٹ کے چار نئے بجلی گھروں اور330 میگا واٹ کے کشن گنگا پاور ہاوٴس کے سپل وے ڈیزائن پر گفتگو ہو گی،بھارتی وفد ہفتے کو پاکستان پہنچے گا،مذاکرات کا دور لاہور میں27 اگست تک جاری رہے گا

سیاسی یتیم ایک ہفتے سے اسلا م آ با د میں شام غریباں منا رہے ہیں،مولانا فضل الرحمن،نواز شریف حسنی مبارک ہے نہ احتجاج کرنے والے اخوان المسلمین ،اگر تیسری قوت نے ان حالات سے فائدہ اٹھایا تو دھرنے دینے والوں کے ہاتھ کچھ نہیں لگے گا،دھرنوں کی سیاست کرنے والوں کا کھیل جلد ختم ہونے والا ہے،تمام سیاسی جماعتیں جمہوریت اورپارلیمنٹ کی بالادستی کے لئے حکومت کے ساتھ ہیں، شہباز شریف کی گرفتاری کا مطالبہ کرنے والے طاہرالقادری کو گرفتار کیا جائے ،صحافیوں سے گفتگو

دونوں گروہ جو کہ پارلیمان کا محاصرہ کئے بیٹھے ہیں انھیں چاہئے کہ وہ بانی پاکستان کی قائم کردہ اعلی جمہوری مثال پر عمل کریں،انتخابات میں شکست کو تسلیم کریں اور پاکستان مسلم لیگ (ن) کی حکومت کے خلاف تخریبی حربے استعمال کرنے کی بجائے ملکی خدمت میں اس حکومت کی قائم کردہ مثال کا مقابلہ کریں، انجنئیر خرم دستگیر خان کا پی ٹی آئی اور پی اے ٹی کو مشورہ

بحران کے حل کیلئے کرداراداکرنے کوکہاگیاتو پیپلزپارٹی تیار ہے ، رحمان ملک

پاکستان کے وزیراعظم نواز شریف ہیں، ساتھ کام کرتے رہیں گے، امریکا ، پاکستان میں سیاسی جماعتوں کے درمیان ہونے والے مذاکرات میں شریک ہیں نہ ہی اسکے معا ملات میں مدا خلت کر رہے ہیں ،ترجمان محکمہ خارجہ

پاکستان میں مستحکم جمہوری حکومت ہونی چاہیے، عا لمی ذرا ئع ابلا غ ،نواز حکومت کا خاتمہ مغرب کے لیے بھی چیلنج ہوگا،افغانستان سے امریکی فوج کی واپسی کے سال پاکستان میں جمہو ری استحکا م ضروری ہے ، عمران خان بند گلی میں جا چکے ہیں ،ان کے پاس دھرنے اور وزیر اعظم کے استعفے کے مطالبے کے علاوہ کوئی دوسرا راستہ نہیں بچا‘امریکی نشریاتی ادارہ

پی آئی اے کی خصوصی پروازکے ذریعے لیبیاسے مزید200پاکستانی وطن پہنچ گئے،وزارت خارجہ،گرفتارپاکستانیوں کی رہائی کے حوالے سے کوششیں جاری ہیں ،175میں سے 107پاکستانیوں کورہاکردیاگیا،ترجمان

اہم خبریں -قومی خبریں -بین الاقوامی خبریں -کھیل -

آج کا کارٹون

حالیہ تبصرے

رمیز احمد 19-01-2017 11:37:14

بہت اچھا فیچر ہے

  مزید
syed shoaib 07-12-2016 12:36:53

isko kisi gahar ki baho baeti bnana chahie na kae bahaer bae parda hoo chand rs. kae khatiryae kaam to mardoon ka hae

  مزید
Abdul salam. 07-12-2016 10:09:21

AOA.Thankyou so much please.Your efforts are highly appreciated please for giving us NEWS in very nice briefly.With regards please.

  مزید
Aqib Abbasi 06-12-2016 15:58:32

Imran khan ko kafi arsay say larkiyan nachany ka moqa nai mila abhi woh moqa dhound rahay hain mil nai raha kindly ab Pajama leaks evidence tou lao awam itni pagil nai ha k ap k jotay ilzamat pay yaqin kar k ap ko ainda election main PM jaisi post pay lay jahay

  مزید
اشفاق احمد 05-12-2016 19:22:44

سامان سو برس کا پل کی خبر نہیں

  مزید
اشفاق احمد 05-12-2016 16:55:34

شیطان اور اس بھائیوں پہ اللہ پاک کی کروڑ کروڑ نعنت

  مزید

ہماری ای میل لسٹ میں شامل ہوں

آج کا سوال

آج کا سوال
پاکستان تحریک انصاف اور عوامی تحریک کے کارکن اسلام آباد میں دھرنا دیئے بیٹھے ہیں، عمران خان اور طاہر القادری دونوں نے نواز شریف کے استعفی کے مطالبہ سمیت مختلف مطالبات کئے ہیں۔ آپ کے خیال کیا دونوں‌جماعتوں کا دھرنا حکومت کے خاتمے کا سبب بنے گا؟؟؟
آپ اس سوال پر ووٹ دینے کے علاوہ اپنا تبصرہ بھی شامل کر سکتے ہیں۔
حکومت کو دونوں دھرنوں سے کوئی خطرہ نہیں۔
جوں‌جوں وقت گزرتا جائے گا دھرنا حکومت کیلئے خطرہ بنتا جائے گا۔ یہ دھرنے حکومت ڈوبنے کا سبب بنیں‌گے۔
نتائج
سوال پر رائے دیجئے۔

دوسرے قارئین کی رائے پڑھئیے۔